پاکستان میں خواجہ سراﺅں کیلئے علیحدہ پاسپورٹ کا اجرا شرو ع ہو گیا

پاکستان میں خواجہ سراﺅں کیلئے علیحدہ پاسپورٹ کا اجرا شرو ع ہو گیا
پاکستان میں خواجہ سراﺅں کیلئے علیحدہ پاسپورٹ کا اجرا شرو ع ہو گیا

  

پشاور (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان نے تاریخ میں پہلی مرتبہ ایسا پاسپورٹ جاری کر دیا جس میں مرد یا خاتون کے علاوہ جنس کے انتخاب کے لیے تیسری آپشن یعنی” مخنث“ بھی موجود ہے۔

”ایکسپریس ٹریبیون“ کے مطابق پاکستان نے پہلی بار مرد اور خواتین کے علاوہ خواجہ سراﺅں کیلئے پاسپورٹ کا اجرا شرو ع کردیا ہے جو فرزانہ جان نامی شہری کو جاری کیا گیاہے۔

ا س نئے پاسپورٹ میں ایسے افراد جو اپنی شناخت بطور مرد یا خاتون ظاہر کرنے سے انکاری تھے انکی شناخت کیلئے ”ایکس “ کا علیحدہ کالم شامل کیا گیا ہے ۔ یہ پاسپورٹ صرف خواجہ سراﺅں کو جاری کیا جائے گا ۔پاسپورٹ کے عمل کو مکمل کرنے میں چھ ماہ سے زیادہ کا عرصہ لگا ہے۔ پاسپورٹ میں اس ایک اضافی کے علاوہ دیگر عام پاسپورٹس کی طرح باقی سب ویسا ہی ہے ۔

اس سے قبل خواجہ سراﺅں کو مردم شماری میں بھی بالاءطاق رکھا گیا مگر پھر پشاور ہائی کورٹ کی ہدایات پر مردم شماری فارم میں خواجہ سراﺅں کیلئے علیحدہ کالم کا اضافہ کیا گیا تھا ۔

پاسپورٹس کی طرح اب خواجہ سراﺅں کو سپریم کورٹ کے حکم کے بعد نادرا کی جانب سے جنس کے انتخاب کیلئے علیحدہ کالم پر مبنی شناختی کارڈز جاری کیے جا رہے ہیں ۔

مزید :

قومی -