دشمن سے بدلہ لینےکے سواکوئی چارہ نہیں تو پھر یہ کام کرڈالیں

دشمن سے بدلہ لینےکے سواکوئی چارہ نہیں تو پھر یہ کام کرڈالیں

  

لاہور (نظام الدولہ )شریف اور کمزور لوگ جب کسی کے شر اور ظلم ونا انصافی کا شکار ہوتے ہیں تو وہ اسکا بدلہ نہیں لے سکتے۔اگر تو ایسے لوگ معاف کرنے کی قدرت رکھتے ہوں تو انہیں کشادہ دلی سے دوسروں کو معاف کرکے خود کو پرسکون کرلینا چاہئے ،درگزر کرنا بڑی عادت اور عبادت ہے۔لیکن جب وہ بدلہ ہی لینا چاہتے ہوں مگر اسکی قدرت نہ رکھتے ہوں تو ایسے لوگوں کو اللہ کے اسم یا منتقم کا وظیفہ کرنا چاہئے۔ عمل یہ ہے۔ سات روز تک وضو بغیر وضو چلتے پھرتے ہر وقت یا مُنتقم کا ورد کرنا چاہئے ۔جو کوئی اپنے دشمن کے ہاتھوں سخت پریشان ہو دشمن ہر وقت نقصان پہنچاتارہتا ہو دشمن بہت طاقتور اور ظالم ہو اور اس کا کچھ بگاڑا نا جاسکتا ہو تو ہر روز بعد نماز ایک ہزارمرتبہ اسم مبارک یا مُنتقم پڑھ کر اللہ تعالیٰ سے دعا مانگے ۔انشاءاللہ دشمن ناکام اور ذلیل ہوجائے گا۔اللہ سے بہتر اسکا بدلہ کوئی اور نہیں لے سکتا ۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -