تاریخ میں پہلی مرتبہ 2 ایسی لڑکیوں کی پیدائش ہونے جارہی ہے کہ پوری دنیا کے سائنسدانوں کی نیندیں اُڑگئیں

تاریخ میں پہلی مرتبہ 2 ایسی لڑکیوں کی پیدائش ہونے جارہی ہے کہ پوری دنیا کے ...
تاریخ میں پہلی مرتبہ 2 ایسی لڑکیوں کی پیدائش ہونے جارہی ہے کہ پوری دنیا کے سائنسدانوں کی نیندیں اُڑگئیں

  


بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا کی تاریخ میں پہلی مرتبہ دو ایسی لڑکیوں کی پیدائش ہونے جا رہی ہے کہ پوری دنیا کے سائنسدانوں کی نیندیں اڑ گئی ہیں۔ دی مرر کے مطابق یہ بچیاں چین کی ایک خاتون کے ہاں کسی بھی وقت پیدا ہو سکتی ہیں اور ان کی پیدائش میں سائنسدانوں کے لیے پریشانی کی بات یہ ہے کہ یہ دنیا کی پہلی بچیاں ہیں جن کے ایمبریوز کے جینز ایڈٹ کیے گئے تھے۔ گزشتہ سال نومبر میں چین کے سائنسدانوں ’ہی جیان کوئی‘ نے یہ متنازعہ ترین تجربہ کرنے کا اعلان کیا تھا ، جس پر اسے دنیا بھر کے سائنسدانوں کی طرف سے شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

سائنسدانوں کا ہی جیان کوئی کے اس تجربے کے متعلق کہنا تھا کہ ”یہ تجربہ انسانیت کے لیے انتہائی خطرناک ثابت ہو گا۔ تاہم ہی جیان یہ تجربہ کر گزرا۔ اس نے لیبارٹری میں ایک مرد کے سپرمز اور عورت کے بیضے لے کر ان دونوں بچیوں کے ایمبریو تیار کیے اور ان ایمبریو کے ڈی این اے کو سی آر آئی ایس پی آر نامی جین ایڈیٹنگ پروسیجر کے ذریعے موڈیفائی کیا اور کسی نامعلوم خاتون کے پیٹ میں ان بچیوں کو رکھ دیا۔ہی جیان نے اس بچیوں کو ”لولو“ (Lulu)اور نینا(Nana) کے نام دیئے۔ اب ان بچیوں کی پیدائش کسی بھی وقت متوقع ہے تاہم یہ کوئی نہیں جانتا کہ وہ بچیاں کس خاتون کے ہاں پیدا ہونے جا رہی ہیں اور وہ خاتون چین میں کہاں رہتی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...