علیحدگی کے بعد شوہر کے ساتھ بچہ پیدا کرنے کی خواہشمند خاتون عدالت پہنچ گئی

علیحدگی کے بعد شوہر کے ساتھ بچہ پیدا کرنے کی خواہشمند خاتون عدالت پہنچ گئی
علیحدگی کے بعد شوہر کے ساتھ بچہ پیدا کرنے کی خواہشمند خاتون عدالت پہنچ گئی

  


ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی شہر ممبئی میں گزشتہ دنوں ایک عدالت میں اپنی نوعیت کا ایک انوکھا فیصلہ سنایا گیا ہے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق ممبئی کی ایک 35سالہ خاتون کا شوہر سے طلاق کا مقدمہ عدالت میں چل رہا تھا۔ اس دوران اس خاتون نے اپنے اسی شوہر کے بچے کی ماں بننے کے لیے عدالت سے رجوع کر لیا اور اب عدالت نے اس کی درخواست منظور کرتے ہوئے اس کے شوہر کو حکم دے دیا ہے کہ طلاق سے قبل اپنی بیوی کے ساتھ ایک اور بچہ پیدا کرے۔

رپورٹ کے مطابق خاتون نے اپنی درخواست میں کہا تھا کہ ”ہمارا ایک بچہ اس سے پہلے ہے اور میں چاہتی ہوں کہ ایک اور بچہ پیدا کروں، اس سے پہلے کہ عمر زیادہ ہو جانے کے باعث میری افزائش نسل کی صلاحیت ختم ہو جائے۔ اگر میرا شوہر چاہے تو کچھ عرصے کے لیے ہم تعلق بحال کر سکتے ہیں اور اگر وہ تعلق بحال نہیں کرنا چاہتا تو آئی وی ایف (مصنوعی طریقہ افزائش) کے ذریعے بچہ پیدا کر لے۔

رپورٹ کے مطابق خاتون کے شوہر نے اس کی اس درخواست کی مخالفت کی اور کہا کہ میں اس خاتون کے ساتھ مزید بچہ پیدا نہیں کرنا چاہتا تاہم عدالت نے خاتون کے حق میں فیصلہ سناتے ہوئے اس کے شوہر کو حکم دیا ہے کہ اگر تم اپنی بیوی کے ساتھ دوبارہ تعلق قائم نہیں کرنا چاہتے تو اس کے ساتھ کسی کلینک پر جاﺅ اور آئی وی ایف کے لیے ڈاکٹر سے مشورہ کرو۔ عدالت نے 26جون تک ڈاکٹر سے مشورہ کرکے اس کی مصدقہ رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...