فیکٹریوں میں روزانہ 10ملین گیلن پانی کا ضیاع،واٹر جوڈیشل کمیشن کا سخت نوٹس

  فیکٹریوں میں روزانہ 10ملین گیلن پانی کا ضیاع،واٹر جوڈیشل کمیشن کا سخت نوٹس

لاہور (عامر بٹ سے)صوبائی دارالحکومت میں دس ملین گیلن پانی کا روزانہ ضیاع، واٹر جوڈیشل کمیشن کے چیئرمین جسٹس علی اکبر قریشی نے نوٹس لے لیافوکل پرسن جوڈیشل کمیشن اسسٹنٹ کمشنر اسامہ شیروان نیازی کو صوبائی دارالحکومت میں ڈھائی سو سے زائد انڈسٹریز میں پانی کے ضیاع کی پریکٹس کی روک تھام کیلئے  ٹاسک دیدیا گیا۔ روز نامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات کے مطابق صوبائی درالحکومت میں ڈھائی سو سے زائد انڈ سٹریز جن میں لیدر انڈسٹریز، ٹیکسٹائل انڈسٹری، ٹینریز انڈسٹری، کیمیکل انڈسٹری، انجینئرنگ انڈسٹری اور میڈیکل انڈسٹری بھی پانی کے ضیاع میں شامل ہیں۔ذرائع نے مزید آگاہی دی کہ صوبائی دارالحکومت میں ڈھائی سوسے زائد انڈسٹریز میں واٹر ری سائیکلنگ سسٹم کی عدم دستیابی کے باعث روزانہ دس ملین گیلن پانی ضائع ہورہا ہے۔واٹر جوڈیشل کمیشن کے چیئرمین جسٹس علی اکبر قریشی نے فوکل پرسن اسسٹنٹ کمشنر اسامہ شیروان نیازی کو مزید ہدایت کی کہ ان سے پانی کے بل کی مد میں بننے والی رقوم کی بھی 7روز میں ریکوری کی جائے اور ان تمام انڈسٹری میں واٹر ری سائیکلنگ سسٹم نصب کئے جائیں بصورت دیگر سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...