وفاقی چیمبر کاروباری مشکلات دور کرنے میں ناکام ہوگیا،بزنس مین پینل

وفاقی چیمبر کاروباری مشکلات دور کرنے میں ناکام ہوگیا،بزنس مین پینل

لاہور(نیوز رپورٹر)چیئرمین بزنس مین پینل میاں انجم نثار کی سسربراہی میں گزشتہ روزبزنس مین پینل کی کور کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں چیئرمین بزنس مین پینل پنجاب خواجہ شاہ زیب اکرم، چاروں صوبوں سے پینل کے سیئنر راہنما، فیڈریشن پاکستان کے ای سی جی بی ممبران اور بزنس کمیونٹی کے ممتازو معروف تاجر و صنعتکاروں نے شرکت کی اور وفاقی و صوبائی بجٹ پر اپنے تحفظات کا اظہار کیااور متفقہ طور پر یہ فیصلہ کیا گیا کہ بزنسمین پینل کا وفد میاں انجم نثار کی سربراہی میں چاروں صوبوں سے اعلیٰ سطحی وفد وزیر اعظم، وزیر خزانہ،مشیر خزانہ، چیئرمین ایف بی آر سے ملاقات کر کے تاجروں و صنعتکاروں کے تحفظات سے آگاہ کرے گا اورحالیہ بجٹ سے پیدا ہونیوالی مشکلات کے خاتمے کے لئے بجٹ میں ترمیم بارے بات کی جائے گی تاکہ کاروباری مندا ختم ہو سکے اورصنعت و تجارت کا رکا ہوا پہیہ چل سکے اور بیروز گاری کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔اجلاس میں پسماندہ علاقوں اور صنعت و تجارت کی ترقی کے لئے پچھلے سال حکومت کی طرف سے اعلان شدہ پیکج کے بجٹ میں خاتمے پر بھی تحفظات کا  اظہار کیا  اور پسماندہ ولاقوں کی ترقی کے لئے مجوزہ پیکج ناگزیر قرار دیا۔اجلاس میں بزنسمین پینل رہنماؤں نے فیڈریشن پاکستان چیمبرز آف کامرس کی کارکردگی پر شدید تحفظات کا اظہار کیا گیا اور تنقیدکرتے ہوئے کہا کہ ایف پی سی سی آئی مسلسل بزنس کمیونٹی کے تحفظات دور کرنے اورکاروباری مشکلات دور کرنے میں بری طرح ناکام ہو گئی ہے اور خاص طور پر حالیہ بجٹ میں حکومت سے صنعت وتجارت کیلئے خصوصی پیکج اور سبسڈی لینے میں مکمل طور پر ناکام ہو گئی ہے۔اجلاس میں یہ متفقہ فیصلہ کیا گیا کہ بزنسمین پینل کا نمائندہ وفدحکومتی اعلیٰ حکام سے ملاقات میں کاروباری طبقہ کی مشکلات کے حل تک کوشیشیں جاری رکھے گا۔چیئرمین بزنسمین پینل میاں انجم نثار کی قیادت میں ہونیوالے اجلاس میں بزنسمین پینل کے سیئنر راہنماؤں،میاں زاہد حسین،سینیٹڑ حاجی غلام علی، سینیٹر چوہدری ظفر،زکریا عثمان،میاں شفقت علی، محمد علی میاں،ریاض خٹک، سرتاج احمد،میاں نعمان کبیر،مرزا عبد الرحمان، احمد جواد،ملک محمد نصیر،تنویر احمد صوفی، چوہدری زاہد حسین، وحید احمد،مدثر مسعود، ظفرمحمود،جاوید اقبال صدیقی،فہیم الرحمان، قیصر خان دادوزئی،شیخ اسلم، شوکت احمدسمیت تاجروں و صنعتکاروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

مزید : کامرس


loading...