حکومت بجٹ میں تاجر دشمن شقوں کو فوری ختم کرے،پیاف

حکومت بجٹ میں تاجر دشمن شقوں کو فوری ختم کرے،پیاف

لاہور(نیوز رپورٹر)پاکستان انڈسٹریل اینڈ ٹریڈرز ایسوسی ایشنز فرنٹ (پیاف) کے سابق چیئرمین عرفان اقبال شیخ نے کہا ہے کہ بجٹ میں تاجردشمن شقوں کو ختم کرنا ضروری ہے۔ بجٹ تاجر دوست نہیں ہے، کاروبار کرنے مشکل ہو جائیں گے۔ ایف بی آر کے بینک اکاؤنٹس ڈیٹا تک رسائی سے تاجر برادری پریشان ہے،منظم کاروبار کو مزید دھچکا لگے گا.خوف وہراس کی فضا کو ختم کرنے کی بجائے بڑھایا جا رہا ہے اس طرح کاروبار نہیں چلتے۔ حکومت بیورو کریسی کے ہاتھوں میں کھیل رہی ہے۔ وفاقی و صوبائی بجٹ میں تاجر دشمن شقوں کا خاتمہ کرنا ضروری ہے وگرنہ کاروباری حالات مزید خراب ہو جائیں گے۔ سابق چیئرمین پیاف عرفان اقبال شیخ نے آج ایک پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے کہا کہ بجٹ میں کئے گئے سخت اقدامات سے شہر کی تاجر برادری تشویش میں مبتلا ہے انکو واپس لیا جائے، روزمرہ استعمال کی اشیاء چینی گھی وغیرہ پر لگائے گئے ٹیکس واپس لئے جائیں۔ عرفان اقبال شیخ نے کہا کہ پہلے ہی حکومتی پالیسیوں کے باعث کاروباری افراد پریشان ہیں اس اقدام سے حالات مزید خراب ہونگے اور ٹیکس اہداف تو حاصل نہیں ہونگے مگر سرمایہ کاری، صنعتکاری اور کاروبار ضرور ختم کر دینگے،بینکوں میں رقوم رکھنے پر تاجروں کااعتماد اٹھ جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ ملک میں کاروباری ماحول کو پروان چڑھانے کی اشد ضرورت ہے جسکے لئے تاجروں و صنعتکاروں کا اعتماد بحال رکھنا اولین شرط ہے۔نعمان کبیر نے مزید کہا کہ بجٹ میں ٹیکس گزاروں کو ہراسگی کے خلاف کوئی تحفظ نہیں دیا گیا ہے۔آئی ایم ایف کے مطالبے پر انڈسٹری کے مفادات کے منافی اقدام کرنے سے اکانومی کی حالت مزید خراب ہو گی۔

مزید : کامرس


loading...