ملتان پولیس کو لوٹ مار کا لائسنس شہریوں میں تشویش کی لہر

ملتان پولیس کو لوٹ مار کا لائسنس شہریوں میں تشویش کی لہر

ملتان (وقائع نگار) ضلعی پولیس نے شہریوں کو تنگ کرنے کا ایک اور بہانہ تلاش کرلیا۔اب ضلع بھر میں گشت افسران و ملازمین روزانہ اپنی شفٹ کے دوران  دس گاڑیاں اور چالیس موٹر سائیکل کو چیک کیا  کریں گے۔جس کی رپورٹ سی پی او کو بھیجوائی جائے گی۔پولیس ذرائع کے مطابق سی پی او ملتان عمران محمود نے کچھ روز قبل ضلع بھر کی پولیس کیلئے بذریعہ وائس کنٹرول احکامات دیئے کہ اب ہر تھانے کی تینوں شفٹوں کے گشت افسران اپنی اپنی ڈیوٹی کے دوران(بقیہ نمبر59صفحہ12پر)

 روزانہ کی بنیاد پر روڈ چیکنگ کریں گے۔اور پھر اسی دوران ہر گشت افسر دس موٹر سائیکل اور چالیس موٹر سائیکل کو چیک کریں گے۔اور چیکنگ کے وقت تمام وہیکلز کا رجسٹریشن نمبر  انجن و چیسیسز نمبر چلانے والا کا نام کی فہرست بناکر دفتر سی پی او بھیجوائے گے۔ذرائع کا یہاں مزید کہنا ہے کہ سی پی او نے گشت افسران کے علاؤہ ڈولفن اور محافظ اسکواڈ کو بھی موٹر سائیکل اور گاڑیوں کی چیکنگ کا ٹارگٹ دیا ہے۔جبکہ دوسری جانب ملتان کے عوام نے پولیس کی جانب سے بلاوجہ  روزانہ کی چیکنگ کو تنگ کرنے اور کمانے کا بہنانہ قرار دے دیا ہے۔شہریوں کی ایک بڑی تعداد نے وزیراعلی پنجاب۔ائی جی پنجاب۔ار پی او ملتان وسیم احمد خان سیال  سے مطالبہ کیا ہے۔مذکورہ صورت حال پر فوری نوٹس لیں۔تاکہ ملتان کی عوام سکھ کا سانس مل سکے۔

لوٹ مار

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...