جی پی او وہاڑی،جعلی ٹکٹوں کی فروخت پر انچارج سمیت دو ملازمین پر مقدمہ

جی پی او وہاڑی،جعلی ٹکٹوں کی فروخت پر انچارج سمیت دو ملازمین پر مقدمہ

وہاڑی(بیورورپورٹ+نمائندہ خصوصی)جی پی اومیں جعلی ٹکٹس کا معاملہ اہم رخ احتیار کرگیا۔ایف آئی اے ملتان نے جی پی او انچارج سمیت دو ملازمین کے خلاف مقدمہ درج کرلیا انچار ج اور کلرک نے عبوری ضمانتیں کرالیں واقعات کے مطابق ایف آئی اے نے ملتان کے سب انسپکٹر اسرار علی کی مدعیت میں درج مقدمہ نمبر225/19میں موقف اختیار کیا کہ مخبر کی اطلاع پر ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے(بقیہ نمبر41صفحہ7پر)

 ملتان کی ہدایات ملی کہ جی پی او وہاڑی میں ریڈ کیا جائے جہاں نائب قاصد محمد علی ڈرائیونگ ٹکٹس فروخت کر رہا تھا جس پر اسے گرفتار کرلیا گیا اور اس کے قبضہ سے جعلی ٹکٹس بھی برآمد کرلئے دوران تفتیش محمد علی نائب قاصد اردلی نے انکشاف کیا کہ جعلی ٹکٹس انچارج جی پی او وہاڑی جمیل مجاہد اور کلرک نور بھٹی نے دی ہیں اور فروخت کرنے کی ڈیوٹی بھی لگائی ہے اور وہ عرصہ دراز سے جی پی او میں وہاڑی میں جعلی ٹکٹوں کی فروخت کا دھندہ جاری ہے جبکہ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سینئر پوسٹ ماسٹر جمیل مجاہد اور کلرک نور بھٹی نے عبوری ضمانت کرالی ہے عوامی و سماجی اور شہری حلقوں جن میں محمد حفیظ،قادر علی،معیز،اظہر،عمر،توصیف عمران،شاہد،زاہد،انوار و دیگر شامل ہیں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ جمیل مجاہد انچارج پوسٹ آفس پہلے بھی جی پی اور ملتان میں مبینہ طور پر فراڈ میں ملوث پایا گیا ہے جس پر حکام نے اسے جبری ریٹائرڈ کردیا تھا اور پھر پیسے کے بل بوتے پر دوسال بعد ایف ایس ٹی نے بحال کردیا اور پھر لیہ میں تعینات ہوا اور پھر خانیوال مواصلات ڈائریکٹر جنرل پوسٹ آفس اسلام آباد،پوسٹ ماسٹر جنرل ملتان سمیت دیگر متعلقہ اعلی حکام سے فوری طور پر نوٹس لینے کا مطالبہ کیا اور محکمہ کو لاکھوں روپے ریونیو نقصان پہنچانے والے انچارج کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

مقدمہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...