وکلاء کی عالمی تنظیم کا محمد مرسی کی وفات کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ

وکلاء کی عالمی تنظیم کا محمد مرسی کی وفات کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ

لندن(این این آئی)انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں کی طرف سے مصر کے سابق صدر ڈاکٹر محمدمرسی کی دوران حراست اچانک وفات کی تحقیقات کا مطالبہ شدت اختیار کرتا جا رہا ہے۔ اقوام متحدہ اور دیگر تنظیموں کے بعد وکلاء کی بین الاقوامی تنظیم نے بھی سابق مصری صدر ڈاکٹر محمد مرسی کی دوران حراست موت کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق بین الاقوامی وکلاء ایسوسی ایشن کے جنیوا میں قائم ہیڈکواٹر سے جاری ایک(بقیہ نمبر20صفحہ12پر)

 میں مصرمیں عبدالفتاح السیسی کی حکومت کی پالیسیوں کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔ جنیوا میں اقوام متحدہ کے انسانی حقوق ہائی کمیشن کے دفتر کے باہر ڈاکٹر محمد مرسی کی وفات کی تحقیقات اور مصری حکومت کی مذمت میں ایک مظاہرہ کیا گیا۔عالمی وکلاء تنظیم نے الزام عاید کیا کہ ڈاکٹر محمد مرسی کی بیماری میں غفلت برت کرانہیں سسک سسک کر مرنے پرمجبور کیا گیا۔

تحقیقات مطالبہ

 ان کی موت کی ذمہ داری مصری رجیم ہے جو انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کی مرتکب ہو رہی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...