جی ایم ریلوے نے ٹریکس میں موجودہ خامیوں کی جان بوجھ کر نشاندہی نہیں کی،تحقیقاتی رپورٹ

  جی ایم ریلوے نے ٹریکس میں موجودہ خامیوں کی جان بوجھ کر نشاندہی نہیں ...

اسلام آباد (آن لائن) پاکستان ریلویز میں بڑھتے ہوئے حادثات کی بنیادی وجہ سامنے آگئی ہے۔جنرل منیجر ریلوے آفتاب اکبر نے ریلوے ٹریکس میں موجود خامیوں کی جان بوجھ کر نشاندہی نہیں کی۔ تحقیقاتی اداروں کی رپورٹس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ جنرل منیجر ریلوے آفتاب اکبر وفاقی وزیر ریلوے سے تمام خامیوں کو پوشیدہ رکھتے ہیں تاکہ ہر حادثے کی ذمہ دری وفاقی وزیر پر آپڑے اور انہیں سیاسی طور پر ہزیمت کا سامنا کرنا پڑے۔ تفصیلات کے مطابق22 جون کو لاہور ریلوے سٹیشن سے صرف چار کلومیٹر دور ریل کی چار بوگیاں پٹڑی سے اتر گئیں چونکہ ابھی ریل کی رفتار تیز نہیں ہوئی تھی اس لئے جانی نقصان نہیں ہوا۔ ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ جی ایم ریلوے کو علم تھا کہ یہ ٹریک نرم ہوچکا ہے اس لئے اس کی فوری بہتری کی ضرورت ہے لیکن جان بوجھ کر موصوف نے اس کوچھپایا۔تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ریلوے ٹریک کے سگنل موثر اور بروقت رکھنا اور ان کی نگرانی رکھنا جی ایم آفتاب اکبر کی ذمہ داری ہے لیکن اس حادثے میں بھی موصوف لاعلم نظر آئے جو کہ ان کی مجرمانہ غفلت شمار کی گئی ہے۔ 

ریلوے تحقیقاتی رپورٹ

مزید : صفحہ آخر


loading...