سول ایوی ایشن نے کارگو تھروپٹ چارجز کا نظام خود سنبھال لیا

      سول ایوی ایشن نے کارگو تھروپٹ چارجز کا نظام خود سنبھال لیا

لاہور(این این آئی/ مانیٹرنگ ڈیسک) سول ایوی ایشن اتھارٹی نے کارگو تھروپٹ چارجز کی وصولی کا نظام خود سنبھال لیا، عملہ تعینات کرکے فی کلو گرام فکس ریٹ مقرر کردیئے گئے۔علاوہ ازیں سول ایوی ایشن اب ٹیکس کی مد میں مسافروں سے ڈالر کے بجائے پاکستانی کرنسی میں ٹیکس وصول کرے گا۔ڈی جی سول ایوی ایشن کی جانب سے تمام ایئر پورٹس مینجر کو مراسلہ جاری کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق عوامی شکایات موصول ہونے پر سی اے اے نے لاہور اور کراچی ایئرپورٹس پر نجی کمپنی سے معاہدہ ختم کیا۔ سول ایوی ایشن کی کارگو تھروپٹ چارجز کی وصولی سے ادارے کو کروڑوں روپے کا ریونیو حاصل ہوگا۔ذرائع کے مطابق لاہور اور کراچی ایئرپورٹ پر تھروپٹ چارجز کی وصولی کے حوالے سے مسافروں کی جانب سے بے پناہ شکایتیں موصول ہورہی تھی درآمد کنندہ اشیا ء پر من مانے نرخ وصول کئے جارہے تھے۔ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ تھروپٹ چارجز کی وصول کیلئے سینئر افسران پر مشتمل عملہ تعینات کردیا گیا ہے، اس سے قبل درآمدی اشیا ء پر تھروپٹ چارجز لگانے کا فارمولہ بہت پیچیدہ ہوا کرتا تھا۔سی اے اے نے تھروپٹ چارجز فارمولے کو آسان بنا تے ہوئے فی کلو گرام پر ریٹ فکس کردیا ہے اور اب درآمد کنندہ سے اضافی وصولی نہیں کی جاسکے گی۔ذرائع کے مطابق سابقہ نجی کمپنی کو بدلنے کیلئے سی اے اے نے متعدد بار ٹینڈر بھی جاری کئے تاہم ٹینڈر پر کسی اور کمپنی نے دلچسپی کا اظہار نہیں کیا۔اب باہر سے آنے والی اشیا ء پر قانونی تقاضے پورے ہونے کے بعد ان کو کلیئر کیا جارہا ہے۔سول ایوی ایشن اتھارٹی نے فی کلو گرام فکس ریٹ بھی مقرر کردیئے ہیں، تمام ممالک سے درآمد ہونے والی اشیا پر چارجز کی وصولی فکس کردی گئی ہے۔مزید برآں سول ایوی ایشن اب ٹیکس کی مد میں مسافروں سے ڈالر کے بجائے پاکستانی کرنسی میں ٹیکس وصول کرے  گا۔ڈی جی سول ایوی ایشن کی جانب سے تمام ایئر پورٹس مینجر کو مراسلہ جاری کیا گیا ہے جس کے مطابق سول ایوی ایشن اب ایئر پورٹ ٹیکس کی مد میں مسافروں سے ڈالر کے بجائے پاکستانی کرنسی میں ٹیکس وصول کریگا جس کے بعد پاکستانی کرنسی میں 2800روپے وصول کیے جائیں گے۔واضح رہے کہ اس سے قبل بیرون ملک جانے والے مسافروں سے 20 ڈالر فی کس وصول کیے جاتے تھے، ملک میں ڈالر کے اتار چڑھاؤ کی وجہ سے مسافروں سے پاکستانی کرنسی میں 2800روپے وصول کیے جائیں گے۔

سی اے اے

مزید : صفحہ آخر


loading...