ایتھوپیا،بغاوت روکنے کی کوشش میں آرمی چیف ریاست امہارا کے صدر اور سینئر مشیر قتل

ایتھوپیا،بغاوت روکنے کی کوشش میں آرمی چیف ریاست امہارا کے صدر اور سینئر مشیر ...

عدیس آ بابا(مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن)ایتھوپیا میں ناکام فوجی بغاوت میں ریاست امہارا کے علاقائی صدر اور ایک اعلیٰ مشیر کی ہلاکت کے چند گھنٹے بعد آرمی چیف بھی کو انکے محافظ نے گولی مار کر قتل کردیا۔یہ بات ملک کے وزیراعظم ابئے احمد کی خاتون ترجمان نے میڈیا کوبتائی۔ خاتون ترجمان بلینی سیوم نے صحافیوں کو بتایا کہ امہارا کے سکیورٹی چیف اسامنیو سائیگے کی زیر قیادت ایک ”نشانہ باز“سکواڈ ہفتہ کی دوپہر جاری ایک اجلاس کے دوران کمرے میں داخل ہوا اور مقامی صدر امبا شیوف میکونن اور ایک اور اعلیٰ اہلکار کو زخمی کردیا جو دونوں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے۔ ترجمان نے بتایا کہ اس واقعہ کے چند گھنٹے بعد ”منظم طرز کے“ نظرآنیوالے حملے میں قومی سکیورٹی فورسزکے چیف آف سٹاف سئیرے میکونن کوانکے گھر میں ایک محافظ نے گولی مار کر ہلاک کردیا جبکہ ان کے پاس ملاقات کیلئے آئے ہوئے ایک ریٹائرڈ جرنیل کو بھی فوجی سربراہ کے محافظ نے قتل کردیا۔ذرائع کے مطابق محافظ کو گرفتارکرلیا گیا ہے جبکہ اسامینو ابھی تک فرار ہے۔تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ ایتھوپیا میں سیاسی بحران کی شدت کی عکاسی کرتا ہے،انٹرنیشنل کرائسز گروپ کے ولیم ڈیوڈسن کا کہنا تھا کہ یہ افسوسناک واقعہ بدقسمتی سے ایتھوپین سیاسی بحران کی گہرائی کا مظہر ہیں،اب یہ بات اہم ہے کہ اس صورتحال سے ملک بھر میں عدم استحکام کی صورت حال بدترین شکل اختیار نہ کرجائے۔انٹرنیشنل کرائسس گروپ کے تجزیہ کار ولیم ڈیویسن نے کہا کہ ’بدقسمتی سے یہ المناک واقعات ایتھوپیا میں سیاسی بحران کی گہرائی ظاہر کرتے ہیں‘۔گذشتہ روز ابے احمد نے کہا تھا کہ ملک کی شمالی ریاست کے دارالحکومت ادیس ابابا میں بغاوت کی کوشش ناکام بنانے کے دوران گولی لگنے کے نتیجے میں ہلاکتیں ہوئی تھیں۔ٹیلی ویڑن پر بات کرتے ہوئے ابے احمد نے کہا تھا کہ جنرل سیر میکانون ہلاک ہونے والے کئی افراد میں شامل تھے۔انہوں نے کہا کہ ’آرمی چیف کو ان کے قریبی افراد نے گولی ماری تھی‘۔ایتھوپیا کے وزیراعظم نے کہا کہ جنرل سیر میکانون ملک کی 9 ریاستوں میں سے ایک امہارا میں بغاوت کا منصوبہ ناکام بنانے کی کوشش کررہے تھے۔

ایتھوپیا

مزید : صفحہ اول


loading...