اگلے سال شفاف مڈٹرم الیکشن  کرائے جائیں، احسن اقبال کا مطالبہ

  اگلے سال شفاف مڈٹرم الیکشن  کرائے جائیں، احسن اقبال کا مطالبہ

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما احسن اقبال نے کہا ہے حکومت کے پاس کوئی تجربہ نہیں ہے ملکی معیشت کو دلدل میں دھکیل دیا گیا ہے اگلے سال شفاف مڈٹرم الیکشن کرائے جائیں۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ ہم ایک ایک پائی کا حساب دیں گے ڈپٹی چیئرمین نیب کوانکوائری کمیشن کا سربراہ بنایا گیا ہے اگر حکومت سنجیدہ ہے تو انکوائری کمیشن کی سربراہی سپریم کورٹ کے جج کو دینی چاہیے۔احسن اقبال کا کہنا تھا کہ آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) میں مختلف آپشن زیر بحث آئیں گے ابھی کوئی حتمی فیصلہ نہیں ہوا۔ انہوں نے کہا کہ اگر تمام اپوزیشن پارٹیاں اسمبلی سے مستعفی ہو جائیں تو جنرل الیکشن ہی دوبارہ کرانے پڑیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ اگر حکومت کو مزید وقت دیا تو کل کو حالات سنبھالنا مشکل ہو جائیں گے جتنی حکومت کو مہلت دی اتنی ہی مشکلات میں اضافہ ہوتا جائے گا۔ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ احتساب کارڈ ایوب خان دور سے استعمال کیا جا رہا ہے ہم مشرف کی نیب کا بھی سامنا کر چکے ہیں ہمیں احتساب کا خوف نہیں ہے ہم نے سب نے کڑا احتساب دیکھا ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن خلفشار کا باعث نہیں بلکہ ملک میں خلفشار روکنا چاہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ پارٹی میں مشاورت کے ساتھ مریم نواز کے جلسوں کا شیڈول طے کیا جائے گا۔

 احسن اقبال

مزید : صفحہ اول


loading...