جانتے ہیں افغان اٹارنی جنرل کے عملے پر حملہ کیوں ہوا، مذمت کرتے ہیں: زلمے خلیل زاد

  جانتے ہیں افغان اٹارنی جنرل کے عملے پر حملہ کیوں ہوا، مذمت کرتے ہیں: زلمے ...

  

کابل(آن لا ئن) امریکہ کے نمائندہ خصوصی برائے افغان مفاہمت زلمے خلیل زاد نے افغانستان کے اٹارنی جنرل کے عملے پر حملے کی مذمت کرتے ہوئے اس کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔ طالبان قیدیوں کی رہائی کے لیے سہولت کار کا کردار ادا کرنے والے افغان اٹارنی جنرل آفس کے ایک وکیل اور ان کی ٹیم کے دیگر ارکان پیر کو دہشت گردی کے ایک حملے میں ہلاک ہو گئے تھے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق نامعلوم افراد نے کابل کے مشرقی علاقے میں اٹارنی جنرل آفس کے عملے کی کار پر اندھا دھند فائرنگ کی تھی جس کے نتیجے میں 2 پراسیکیوٹرز سمیت 5افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ زلمے خلیل زاد نے اس حملے کو امن دشمنوں کی جانب سے کیا جانے والا حملہ قرار دیا ہے۔ آج اپنے ایک ٹوئٹ میں زلمے خلیل زاد نے کہا کہ امریکہ اس حملے کی مذمت اور متاثرہ خاندانوں سے اظہار تعزیت کرتا ہے۔ یہ حملہ جس چیز کی نشان دہی کرتا ہے ہم اس سے با خبر ہیں۔ان کے بقول امن مخالف ملکی و غیر ملکی قوتیں مفاہمتی عمل کو متاثر اور اس میں تاخیر چاہتی ہیں۔

زلمے خلیل زاد

مزید :

صفحہ آخر -