”ہاں! ہم سے یہ غلطی ہوئی“ وسیم خان نے بالآخر اعتراف کر لیا

”ہاں! ہم سے یہ غلطی ہوئی“ وسیم خان نے بالآخر اعتراف کر لیا
”ہاں! ہم سے یہ غلطی ہوئی“ وسیم خان نے بالآخر اعتراف کر لیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) وسیم خان نے سٹاف کو نکالنے کی غلطی کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ احساس ہوتے ہی ہم نے اپنا فیصلہ تبدیل بھی کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق نجی خبر رساں ادارے کو دئیے گئے انٹرویو میں وسیم خان نے کہا کہ میں اعتراف کرتا ہوں کہ نچلے درجے کے سٹاف کو نکالنے کا فیصلہ درست نہیں تھا اور اسی لئے ہم نے فوری طورپر اسے تبدیل کرتے ہوئے ان کی بہتری کیلئے سپورٹ فنڈز میں رقم دینے کا اعلان کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا مقصد پاکستان کرکٹ کی نیک نامی میں اضافہ کرنا ہے جبکہ سسٹم کی بہتری کیلئے نئی تقرریاں کیں لیکن انہیں زیادہ تنخواہیں دینے کا تاثر درست نہیں اور مجھے یقین ہے کہ جلد اچھے نتائج سامنے آنا شروع ہوجائیں گے، ہم چاہتے ہیں کہ پاکستانی ٹیم ہمیشہ درجہ بندی میں ٹاپ پر رہے۔

وسیم خان کا کہنا تھا کہ قومی ٹیم کا دورہ انگلینڈ بہت اہم ہے لیکن ہمارے لئے کھلاڑیوں کی حفاظت اولین ترجیح ہو گی، اس سلسلے میں کوئی کوتاہی نہیں کرسکتے، میزبان بورڈ نے پلیئرز اور کوچنگ سٹاف کیلئے تمام احتیاطی تدابیر اپنانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ پاکستان کرکٹ درست سمت میں جاری ہے، تینوں فارمیٹ میں کارکردگی کا گراف بلند سے بلند تر کرنے کیلئے ہم اقدامات کررہے ہیں۔

ایک سوال پر وسیم خان نے کہا کہ بابر اعظم نے خود کو کپتانی کا اہل ثابت کیا ہے،وہ جنوبی افریقی گریم سمتھ کی طرح پاکستانی کامیابیوں میں اہم کرادار ادا کرنے کی اہلیت رکھتے ہیں، یہ تاثر درست نہیں کہ کپتان بنانے سے بابر کی بیٹنگ متاثر ہوگی، وہ ذہنی طورپر مضبوط کھلاڑی ہیں، انہوں نے ٹی 20 کپتان کے طورپر اپنا انتخاب درست ثابت کیا، یہی وجہ ہے کہ اب ون ڈے کرکٹ کیلئے بھی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔

مزید :

کھیل -