وزیر اعظم عمران خان نے ہمیں ٹاسک دیا ہے کہ ۔۔۔۔وزیر اطلاعات شبلی فراز نے ایسی بات کہہ دی کہ اپوزیشن کی راتوں کی نیند اڑ جائےگی

وزیر اعظم عمران خان نے ہمیں ٹاسک دیا ہے کہ ۔۔۔۔وزیر اطلاعات شبلی فراز نے ایسی ...
وزیر اعظم عمران خان نے ہمیں ٹاسک دیا ہے کہ ۔۔۔۔وزیر اطلاعات شبلی فراز نے ایسی بات کہہ دی کہ اپوزیشن کی راتوں کی نیند اڑ جائےگی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہےکہ چھ ماہ بعدہماری حکومت کے  ڈھائی سال رہ جائیں گے ،وزیراعظم نے سنگ میل دیا کہ مڈ ٹرم سے پہلے ہمیں کام ختم کرلینے چاہیں،اٹھارویں ترمیم کی بعض شقوں پر بحث ہونی چاہیے ،بحث نہ ہونے کا رویہ غیرصحت مندانہ ہے،خامیاں دورکرنی چاہیں،جتنے بھی وزرا ہیں ایک ٹیم کے طور پر سامنے آئے ہیں ،کابینہ ہو یا پارٹی ہم مضبوطی سے کھڑے ہیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم نیک نیتی سے ملک کو چلا رہے ہیں ،وزیراعظم اٹھارہ ،اٹھارہ گھنٹےکام کرتےہیں ،ہر اہم مواقع پر وزیراعظم ایوان میں آتے ہیں ،اپوزیشن لیڈرکو بھی ایوان میں آنا چاہیے جبکہ ارکان اسمبلی کو اپنے تحفظات کااظہار باہر نہیں کرنا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ اونچ نیچ ہوتی رہتی ہے ،ہم اتفاق نہ کریں تو تنقید بھی کرتے ہیں ،کوئی بھی قانون ایسا نہیں ہوناچاہیے کہ اس پر بحث نہ کرسکیں ،اٹھارویں ترمیم کی بعض شقوں پر بحث ہونی چاہیے،

بحث نہ ہونے کا رویہ غیرصحت مندانہ ہے،خامیاں دورکرنی چاہییں۔سینیٹر شبلی فراز کا کہنا تھا کہ آج بہت اچھا ماحول تھا ،میں بھی اس میٹنگ میں تھا،چھ ماہ بعد ہمارے ڈھائی سال رہ جائیں گے ،وزیراعظم نے سنگ میل دیا کہ مڈ ٹرم سے پہلے ہمیں کام ختم کرلینے چاہییں،جتنے بھی وزرا ہیں ایک ٹیم کے طور پر سامنے آئے ہیں ،کابینہ ہو یا پارٹی ہم مضبوطی سے کھڑے ہیں،

وزیر اعظم نیک نیتی سے ملک کو چلا رہے ہیں ،وزیراعظم 18،18گھنٹےکام کرتےہیں ،اپوزیشن لیڈرکو بھی ایوان میں آنا چاہیے ،ہر 

اہم مواقع پر وزیراعظم ایوان میں آتے ہیں ۔

سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ اعتراضات والی بات پارلیمانی کمیٹی کی میٹنگ میں ہونی چاہیے ،ارکان اسمبلی کو تحفظات کااظہار باہر نہیں کرنا چاہیے،ہر کسی کے گلے شکو ے ہوتے ہیں لیکن لیڈر حالات کےتناظر میں دیکھتاہے۔

مزید :

قومی -