نئے بجٹ میں کسی ٹیکس چور کو نہیں چھوڑوں گا،وزیر خزانہ

نئے بجٹ میں کسی ٹیکس چور کو نہیں چھوڑوں گا،وزیر خزانہ

  

  اسلام آباد (این این آئی)وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ اب ایف بی آر کے نوٹسز نظرانداز کرنے والوں کا نقصان ہوگا، نئے بجٹ میں کسی ٹیکس چور کو نہیں چھوڑوں گا۔نجی ٹی وی سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ بجٹ میں 383 ارب روپے کی بجائے 264 ارب روپے کے اقدامات ہو سکتے ہیں، سینیٹ کی خزانہ کمیٹی کے ذریعے مختلف شعبوں کو ریلیف دیا گیا۔انہوں نے کہاکہ بجٹ کی مشاورت میں سینیٹ کی تجاویز شامل کی گئی ہیں، یکم جولائی سے ٹیکس اقدامات پر عملدرآمد شروع ہو جائے گا، نئے بجٹ میں کسی ٹیکس چور کو نہیں چھوڑوں گا، ٹیکس معاملات پر تمام فریقین سے بیٹھ کر بات کرنے کیلئے تیار ہوں۔انہوں نے کہاکہ تمام فریقین سے بات کرنے کے بعد پالیسی انفورسمنٹ اقدامات ہوں گے، ماضی میں ٹیکس چور ٹیکس نوٹس نظرانداز کرلیتے تھے، اب ایف بی آر کے نوٹسز نظرانداز کرنے والوں نقصان ہوگا۔وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ ٹیکس افسر کسی کو ٹیکس گزار ہراساں نہیں کرسکے گا، نئے بجٹ میں ٹیکس چور کے لیے کوئی رعایت نہیں۔ 

وزیر خزانہ

مزید :

صفحہ آخر -