ملتان: خاتون وکیل کا نازیبا رویہ جسٹس امیر بھٹی کا انتہائی دکھ کااظہار

 ملتان: خاتون وکیل کا نازیبا رویہ جسٹس امیر بھٹی کا انتہائی دکھ کااظہار

  

  ملتان ( خصو صی   رپورٹر  )لاہور ہائی کورٹ کے نامزد چیف جسٹس مسٹر جسٹس محمد امیر بھٹی نے سینئر خاتون وکیل (بقیہ نمبر29صفحہ6پر)

کے رویہ کو نازیبا قرار  دیتے ہوئے دکھ کا اظہار کیا ہے یاد رہے کہ فاضل جسٹس ملتان دورے کے دوران رات 12 بجے تک عدالتی امور سر انجام دینے اور مقدمات نمٹانے میں خصوصی شہرت رکھتے ہیں وہ 22 جون کو دو روزہ دورے پر ملتان بینچ پہنچے تو عدالت میں مقررہ شیڈول کے علاوہ دیگر مقدمات پیش کرنے سے عدالت کے عملے نے معذرت کرلی جس پر  سینیئر وکلا چوہدری ارشد اور سید مزمل حسن بخاری اور دیگر سینئر وکلا نے روسٹر پر پہنچ کر فاضل جج سے استدعا کی کہ آپکے انتظار میں سینکڑوں مقدمات سماعت کے منتظر ہیں اور درجنوں معاملات اسی دن حل ہوتے ہیں جس پر عدالت نے بعدازاں اجازت دے دی اس حوالے سے ملتان کے شہری کی تین سال گزرنے اور سیکورٹی کی رقم جمع ہونے کے باوجود گیس کنکشن جاری نہ ہونے پر عدالت نے سوئی گیس حکام کو گزشتہ روز طلب کر رکھا تھا جس پر سوئی گیس حکام اپنی وکیل فرح شریف کھوسہ کے ذریعے پیش ہوئے اور خاتون کونسل نے نقشہ دستاویزات ملاحظہ کے لیے پیش کیں تو عدالت عالیہ نے کہا کہ مروجہ  طریقہ کے مطابق ان دستاویزات کو باقاعدہ طریقے سے پیش کیا جائے لیکن خاتون وکیل جذباتی ہو گئیں اور خاصی دیر تک روسٹر پر موجود رہیں جس پر فاضل جسٹس نے دکھ اور تاسف کا اظہار کیا لیکن سینئر وکلا کے معذرت پیش کرنے اور بار عہدیداران کی جانب سے آئندہ محتاط رہنے کی یقین دہانی پر عدالت عالیہ نے ایک مزید کیس کی سماعت کی اور دوپہر کو عدالت ختم کردی گئی، ہائیکورٹ بار کے رکن سفیر بھٹہ نے مذکورہ واقعہ پر دلی رنج کا اظہار کرتے ہوئے بار کی روایات کے منافی اور بار و بنچ کے درمیان فاصلے بڑھانے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

خاتون وکیل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -