اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے اساتذہ بائیکاٹ کے مسئلہ پر آمنے سامنے 

اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے اساتذہ بائیکاٹ کے مسئلہ پر آمنے سامنے 

  

پشاو ر(سٹی رپورٹر)اسلامیہ کالج یونیورسٹی میں تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے حوالے سے جاری ہڑتال میں دو اساتذہ گروپ کلاسز سے بائیکاٹ کے مسلے پر امنے سامنے ٹیچنگ سٹاف ایسو سی ایشن نے دو روز سے ہر قسم کی تعلیمی سرگرمیوں سے بائیکاٹ کر رکھا ہے جبکہ گزشتہ روز زبردستی کلاسز بھی بند کیے گئے تاہم سلامیہ کالج پشاور کے سنیئر بی پی ایس اساتذہ نے تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے حوالے سے جاری ہڑتال میں کلاسز  سے بائیکاٹ کا فیصلہ مسترد کیا ہے اور واضح کیا ہے کہ طلبہ کی وسیع تر مفاد میں کلاسز سے بائیکاٹ نہیں کر سکتے اور مطالبہ کیا ہے کہ حکومت سنجیدگی سے مسائل کو حل کریں اجلاس میں ٹیچنگ سٹاف ایسو سی ایشن کے انتخابات  جلد از جلد منعقد کرانے کا بھی مطالبہ کیا گیا  اس بات کا فیصلہ سنیئر بی پی ایس اساتذہ کے اجلاس میں کیا گیا جسمیں اسلامیہ کالج کے حالیہ صورت حال کا جائزہ لیا گیا اجلاس کے شرکاء کا کہنا تھا کہ اسلامیہ کالج میں بد ترین معاشی صورت حال  سے دو چار ہے لیکن سب سے بڑا مسلہ طلبہ کے کلاسز کا ہے چونکہ کورونا کے باعث طلبہ کا قیمتی وقت ضائع ہوا ہے اور انکی تعلیمی سرگرمیاں کافی عرصہ سے معطل رہی ہے اسی لئے طلبہ کے وسیع تر مفاد میں  کلاسز جاری رکھینگے اور انکا مزید وقت ضائع نہیں کرینگے اجلاس میں اساتذہ نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ ہم ہر قسم کے تعاون کیلئے تیار ہیں لیکن ہمارے معاملات پر سنجیدگی سے غور کرے اور ہمارے جائز مطالبات کو حل کریں بصورت دیگر احتجاج جاری رہے گا  تاہم کلاسز کا بائیکاٹ نہیں کرینگے  اجلاس میں ٹیچنگ سٹاف ایسو سی ایشن کے انتخابات کو فلفور منعقد کرانے کا مطالبہ بھی کیا گیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -