کراچی میں مقامی مہاجر بیروزگار کئے جارہے ہیں، سلیم حیدر

کراچی میں مقامی مہاجر بیروزگار کئے جارہے ہیں، سلیم حیدر

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)مہاجر اتحاد تحریک لیبر ونگ کا ایک اجلاس چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر کی صدارت میں ہوا، جس میں مہاجر اتحاد اور مہاجر صوبے کے ایجنڈے کے علاوہ مہاجر نوجوانوں کو روزگار سے محروم کئے جانے کا بھی جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں انچارج ایم آئی ٹی لیبر ونگ عامر رحمن، صدر محبوب رضا، شان قریشی، عبداللہ، شکیل احمد اور دیگر نے شرکت کی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہاکہ کراچی میں مقامی مہاجر وں کو روزگار دینے کے بجائے سندھ کے دیہی علاقوں اور دیگر شہروں سے آنے والے افراد کو روزگار دیا جارہا ہے۔ کراچی کے مہاجر جنہوں نے کراچی کو روشنیوں کا شہر بنایا اور جن کی محنت اور خون پسینے سے آج یہ شہر دنیا کے بڑے ترقی یافتہ شہروں میں شمار ہوتا ہے لیکن ایک منصوبے کے تحت اس شہر میں یا تو کراچی کا جعلی ڈومیسائل بنواکر یا دیگر شہروں کے ڈومیسائل رکھنے والے لوگوں کو روزگار دیا جارہا ہے اور کراچی کی مقامی مہاجر آبادی بیروزگاری کے دلدل میں پھنستی جارہی ہے۔ اب کراچی کے اعلیٰ تعلیم یافتہ مہاجر نوجوان یا تو ٹیکسی چلارہے ہیں یا پھر کھانا سپلائی کرنے والے رائیڈر کی ملازمت کرنے پر مجبور ہیں۔ جبکہ کراچی کے تمام سرکاری نیم سرکاری اداروں میں سندھ  کے بدنام ترین راشی اور نااہل افسران و سندھی النسل ملازمین کو لاکر لگایا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ حالت یہ ہوگئی ہے کہ اب پرائیویٹ فیکٹریوں اور ملوں کے مالکان اور انتظامیہ کو بھی محکمہ لیبر اور صوبائی حکومت کی جانب سے مجبور کیا جارہا ہے کہ وہ اندرون سندھ کے دیہی علاقوں سے تعلق رکھنے والے افراد کو ملازمت دیں جو ظلم کی انتہا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -