آرٹس کونسل ویکسی نیشن سینٹر کا آڈٹ کرایا جائے: دی آرٹس فورم

آرٹس کونسل ویکسی نیشن سینٹر کا آڈٹ کرایا جائے: دی آرٹس فورم

  

 کراچی(اسٹاف رپورٹر)دی آرٹس فورم کراچی کے صدر نجم الدین شیخ،سیکرٹری مبشرمیر، ڈاکٹر جاویدمنظر،سید عبدالباسط،زیڈ ایچ خرم، صباحت بخاری،قندیل جعفری،نسیم شاہ ایڈوکیٹ،ڈاکٹرعین الرضا،تحسیم الحق حقی،نعیم طاہر اور دیگر نے حکومت سندھ کی جانب سے آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں قائم کورونا ویکسی نیشن سینٹر میں ہونے والی بے قاعدگیوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ آرٹس کونسل کی انتظامیہ نے مہلک وبا سے بچا کے لیے لگائی جانے والی ویکسین کو بھی اپنی سیاست کے لیے استعمال کیا ہے،جو انتہائی قابل مذمت ہے۔حکومت سندھ،این سی ای او اور دیگر متعلقہ حکام آرٹس کونسل میں قائم ویکسی نیشن سینٹر کا آڈٹ کرانے کے احکامات جاری کرتے ہوئے اس میں ملوث عناصر کے خلاف کارروائی عمل میں لائیں۔اپنے جاری بیان میں دی آرٹس فورم کے رہنماؤں نے کہا کہ کورونا وبا سے بچا ؤکے لیے اس وقت ملک بھر میں ویکسی نیشن کا عمل جاری ہے۔حکومت سندھ نے فنون لطیفہ سے وابستہ افراد کی سہولت کے لیے آرٹس کونسل کراچی میں ویکسی نیشن سینٹر قائم کیا،جس کے تمام انتظامی امور آرٹس کونسل انتظامیہ کے پاس تھے۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کی اطلاعات سامنے آئی ہیں کہ کورونا ویکسی نیشن سینٹر کو ذاتی فوائد اور اپنی سیاست چمکانے کے لیے استعمال کیا گیا اور آرٹس کونسل کے ممبران سے زیادہ اس ویکسی نیشن سینٹر سے آرٹس کونسل کے عہدیداروں کے عزیز و اقارب اور دوست احباب فیضیاب ہوئے۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کا طرز عمل آرٹس کونسل کے عہدیداروں کی ذہنی پسماندگی کا عکاس ہے۔دی آرٹس فورم پینل کے رہنماؤں نے وزیراعلی سندھ سیدمراد علی شاہ،این سی او سی اور دیگر متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا کہ آرٹس کونسل میں قائم ویکسی نیشن سینٹر کے مکمل آڈٹ کے احکامات جاری کیے جائیں اور اس بات کی تحقیقات کی جائے شاعروں،ادیبوں،فنکاروں اور گلوکاروں کے نام پر ویکسین حاصل کرنے والوں نے اس ویکسی نیشن سینٹر میں کس طرح بے قاعدگیاں کرتے ہوئے اپنے ناپاک عزائم کی تکمیل کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی سے ویکسی نیشن کرانے والے تمام افراد کا ڈیٹا ان کے شناختی کارڈز نمبر کے ہمراہ فراہم کیا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -