گیٹ پر شراب برآمدگی کا معاملہ ،ترجمان پنجاب یونیورسٹی نے اصل سازش کا بھانڈا پھوڑ دیا 

گیٹ پر شراب برآمدگی کا معاملہ ،ترجمان پنجاب یونیورسٹی نے اصل سازش کا بھانڈا ...
گیٹ پر شراب برآمدگی کا معاملہ ،ترجمان پنجاب یونیورسٹی نے اصل سازش کا بھانڈا پھوڑ دیا 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)پنجاب یونیورسٹی کے ترجمان نے کہا ہے کہ پنجاب یونیورسٹی کو بدنام کرنے کے لئے شراب کی بوتلیں سازش کے تحت داخلی گیٹ تک پہنچائی گئیں جو سخت سیکیورٹی اقدامات کے باعث گیٹ پر ہی پکڑ لی گئی،حال ہی میں پنجاب یونیورسٹی کی عالمی رینکنگ میں اضافہ ہونے کی خبر آئی تھی اور پنجاب یونیورسٹی کی ترقی کو بین الاقوامی سطح پر سراہا گیا تاہم کچھ عناصر سے اس کی ترقی ہضم نہیں ہو رہی اور یونیورسٹی کو بدنام کرنے کے لئے سازش کی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان پنجاب یونیورسٹی نے کہا کہ ماضی میں بھی جب بھی یونیورسٹی کی رینکنگ میں بہتر ی کی خبر آئی ، انہی دنوں میں لڑائی جھگڑوں کے ذریعے پنجاب یونیورسٹی کا امیج خراب کرنے کی کوشش کی گئی ہے،رینکنگ کی خبر میں بہتری کے ساتھ ہی ایسے واقعات کامسلسل تین سال سے تواتر کے ساتھ رونما ہونا ثابت کرتا ہے کہ چند خفیہ عناصر سے پنجاب یونیورسٹی کی ترقی ہضم نہیں ہو رہی۔

ترجمان نے کہا کہ یونیورسٹی میں منشیات یا کسی بھی ممنوعہ اشیا کے استعمال سے متعلق پروپیگنڈہ بے بنیاد ہے، ایک اہم سوال یہ ہے کہ شراب کی بیس بوتلیں کس طرح کوئی موٹر سائیکل پر عام شاپنگ بیگ میں ڈال کر کھلے عام گھومتے ہوئے کسی ایسی جگہ پہنچا سکتا ہے جہاں گیٹ پر سخت چیکنگ ہوتی ہو ؟ واقعہ اس انداز میں پیش آیا ہے جیسے منصوبہ ساز چاہتے تھے کہ گیٹ پر شراب پکڑی جائے اور یوں یونیورسٹی کو بدنام کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ بجائے اس کہ شراب کی بوتلیں پکڑے جانے کے اقدام کو سراہا جاتا، سوچے سمجھے منصوبے کے تحت منفی پراپیگنڈہ کیا جا رہا ہے۔

ترجمان نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی میں انتظامیہ کی کوششوں سے پر امن تعلیمی ماحول قائم کیا گیا ہے تاہم کچھ عناصر اپنی سازشوں کے ذریعے اس پر امن تعلیمی ماحول کو خراب کرنے کی کوشش کرتے ہیں جس سے نمٹنے کے لئے یونیورسٹی انتظامیہ قانون کے مطابق بروقت ایکشن بھی لیتی ہے ۔ ترجمان نے واضح کیا کہ پنجاب یونیورسٹی کا ماحول خراب کرنے یا غلط تاثر کو پھیلانے کی کسی سازش کو کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا۔ 

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -