سنہ 2015 سے اب تک 138 ممالک نے روزانہ کی بنیاد پر اوسطاً 283 پاکستانیوں کو ڈیپورٹ کیا، انتہائی پریشان کن تفصیلات

سنہ 2015 سے اب تک 138 ممالک نے روزانہ کی بنیاد پر اوسطاً 283 پاکستانیوں کو ڈیپورٹ ...
سنہ 2015 سے اب تک 138 ممالک نے روزانہ کی بنیاد پر اوسطاً 283 پاکستانیوں کو ڈیپورٹ کیا، انتہائی پریشان کن تفصیلات
سورس: devdiscourse

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سنہ 2015 سے دنیا بھرمیں بسنے والے تارکینِ پاکستان کی بے دخلی کا سلسلہ جاری ہے۔ گزشتہ چھ سال کے عرصے کے دوران روزانہ کی بنیاد پر 100 سے زائد ممالک سے اوسطاً 283 پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کیا جا رہا ہے۔

انگریزی اخبار دی نیوز کی رپورٹ کے مطابق 2015 سے اب تک 138 ممالک نے چھ لاکھ 18 ہزار 877 پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کیا ہے۔ فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کے مطابق ممکنہ طور پر بیرون ممالک سے بے دخل ہونے والے پاکستانیوں کو بروقت پاکستانی مشنز کی جانب سے مدد میسر نہ آنے کی وجہ سے کاغذات مکمل نہیں ہوسکے۔

اب تک ڈی پورٹ ہونے والے پاکستانیوں کی 72 فیصد تعداد کو سات برادر اسلامی ملکوں نے اپنے ملک سے نکالا ہے۔ ان میں سعودی عرب، عمان، متحدہ عرب امارات، قطر، بحرین، ایران اور ترکی شامل ہیں۔

گزشتہ چھ سالوں میں سعودی عرب نے مجموعی طور پر تین لاکھ 21 ہزار 590 (147 روزانہ) پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کیا۔ یہ دنیا بھر سے ڈی پورٹ ہونے والے پاکستانیوں کی کل تعداد کا 52فیصد بنتا ہے۔ سعودی عرب نے 2015 میں 64 ہزار 403، 2016 میں 57 ہزار 704، 2017 میں 93 ہزار 736، 2018 میں 38 ہزار 470، 2019 میں 38 ہزار 470 اور 2020 میں 19 ہزار 333 پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کیا۔

پاکستانیوں کو اپنے ملک سے نکالنے میں ایران کا دوسرا نمبر رہا جس نے چھ سال میں ایک لاکھ 36 ہزار 930 لوگوں کو ڈی پورٹ کیا۔ متحدہ عرب امارات نے 53 ہزار 649 شہریوں کو ڈی پورٹ کیا۔ اس کے علاوہ عمان نے چار ہزار 553، برطانیہ نے آٹھ ہزار ، ترکی نے 32 ہزار 300، امریکہ نے 1700،  تھائی لینڈ نے 1563 اور قطر نے گزشتہ چھ سال کے عرصے میں 870 پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کیا۔

یورپی ملک یونان سے 6230، بھارت سے 243، روس سے 564 ، بحرین سے 1030، آسٹریلیا سے 203 اور بنگلہ دیش سے 183 پاکستانی گزشتہ چھ سال میں ڈی پورٹ ہوئے۔ جنوبی افریقہ نے 3800، چین نے 350، آذر بائیجان نے 200، کینیڈا نے چار، ہانگ کانگ نے 800 اور فرانس نے 758 پاکستانیوں کو 2015 سے اب تک ڈی پورٹ کیا ہے۔

ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ سعودی اور متحدہ عرب امارات سمیت متعدد ممالک کی جانب سے نئی امیگریشن پالیسی اپنائی گئی ہے جس کے باعث پاکستانیوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

مزید :

Breaking News -قومی -تارکین پاکستان -