معاہدوں کے بعد معیشت بہتر روپیہ مزید گرے گا، اورنگزیب کھچی

   معاہدوں کے بعد معیشت بہتر روپیہ مزید گرے گا، اورنگزیب کھچی

  

 میلسی (نامہ نگار)تحریک انصاف کے ضلعی صدر اور میلسی سے مستعفی (بقیہ نمبر28صفحہ6پر)

رکن قومی اسمبلی محمد اور نگ زیب خان کھچی نے کہا ہے کہ آئی ایم۔ایف اور چین سے معاہدوں کے بعد معیشت میں بہتری تو آئے گی مگر جو شرائط مانی گئی ہیں اس سے روہے کی قیمت اور گھٹے گی یو ٹیلیٹی سٹورز کی تعداد بڑھانا پی ٹی آئی کا فیصلہ تھا جس کا کریڈٹ حکومت لے رہی ہے پی ٹی آئی کے دور میں گنے کی بمپر کراپ سے چینی کے نرخ مسلسل بہتر ہیں مگر دوماہ کی حکو مت اسے اپنے کھاتے میں لے رہی ہے تحریک عدم اعتماد کے وقت بھی 182 پر ڈالر تھا احساس پروگرام جاری تھا جسے بین الاقوامی سطح پر "ری کگنائز "کر کے دی بیسٹ قرار دیا گیا اور صحت کارڈ پروگرام جاری تھا۔لیکن موجودہ حکمران جو کوشش کر رہے ہیں کہ عوام کو بے وقوف بنایا جائے اور ڈیفالٹ کا الزام پی ٹی آئی کے سر دھرا جائے تو عوام بہت سمجھدار ہے وہ موجودہ حکومت کے دستخط شدہ اکنامک ریویو سے پہلے ہی واقف ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنی اقامت  گاہ پر کارکنوں کے اجلاس سے خطاب میں کیا محمد اورنگ زیب خان کھچی نے کہا کہ امپورٹڈ حکومت لوگوں کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لیے حقائق کو مسخ کر رہی ہے کہ ہمارے امدادی پروگرام تحریک عدم اعتماد کے وقت شروع ہوئے حالانکہ کامیاب نوجوان پروگرام ہو یا احساس پروگرام یہ بہت پہلے شروع کیے گئے۔ عمران خان  نے پٹرول کی قیمت میں سبسڈی  دی تو آئی ایم ایف کو اعتماد میں لیا کہ ہم نے کہاں سے ری فنڈنگ کرنی ہے۔اکنامک ڈیفالٹ پی ایم۔ایل 2018 میں چھوڑ کر گئی اور معیشت آئی سی یو میں تھے ہم نے ایکسپورٹ بڑھائی۔جی ڈی پی 6 تک پہنچائی جس کا اکنامک سروے میں اعتراف سب سے بڑی حقیقت ہے۔انہوں نے کہا کہ قر ضے کی رقم ملنے کے بعد بھی اس حکومت میں صلاحیت نہیں کہ ڈالر کی پرواز رک سکے انہوں نے کہا کہ حل انتخابات ہیں فریز مینڈیٹ ضروری ہے اس موقع پر عالم گیر خان کھچی۔پی ٹی آئی کے ضلعی جنرل سیکرٹری سلمان خان بھابھہ. پی ٹی آئی میلسی کے کوارڈینیٹر وسیم احمد شیخ اور دیگر رہنما موجود تھے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -