جامعہ اسلامیہ کرپشن کیس،مبینہ ملزم کی خفیہ جائیدادیں بے نقاب

جامعہ اسلامیہ کرپشن کیس،مبینہ ملزم کی خفیہ جائیدادیں بے نقاب

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ بیورو)ذرائع کے مطابق اسلامیہ یونیورسٹی شعبہ ٹرانسپورٹ میں کرپشن کرنے والے مبینہ ملزم ثمروحید کی تمام خفیہ جائیدادیں شہری لطیف انور کی طرف سے(بقیہ نمبر11صفحہ6پر)

 ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن پنجاب کودی جانیوالی ایک تحریری درخواست نمبر2047 (8 اکتوبر2019)میں سامنے آگئی ہیں۔ ثمروحید اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپورمیں سال2007 میں سکیلBPS-II میں بطورٹرانسپورٹ سپروائزر بھرتی ہواتھا۔موصوف نے گاڑیوں کے ڈیزل ٹائروں بیٹریوں کی خریداوردیگرپرزہ جات اورمرمت کے نام پرکروڑوں روپے  کی مبینہ خوردبرد کی جس کی تفصیل کے مطابق پلاٹ نمبر1900/31 غوثیہ کالونی بہاولپورمالیتی60 لاکھ کا مکان المعروف ثمرہاؤس واقع گلبرگ کالونی بہاولنگرمالیتی تقریبادوکروڑ روپے جاپان ٹاؤن پلاٹ نمبر8 رقبہ تعدادی13 مرلے تقریبا70 لاکھ روپے پلاٹ / مکان واقع جیل روڈ بہاولنگر مالیتی تقریبا ایک کروڑ روپے گاڑیLEE-16/6578 ٹیوٹاکرولا،گاڑی سوزکی ویگنار نمبریLEA-18/2601 مالیتی13 لاکھ روپے گاڑی ٹیوٹا کرولاLEA-16/1575 مالیتی25 لاکھ روپے گاڑی ٹیوٹاکرولانمبرLEA-17/819 مالیتی30 لاکھ روپے ہے۔ا سی طرح چندہی سالوں معمولی تنخواہ لینے والے ٹرانسپورٹ سپروائزر نے کروڑوں روپے کی جائیدادبنالی ہے جس کے بارے میں ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب کوتحریری درخواست بھی دی گئی ہے تین سال کاعرصہ گزرنے کے باوجود کوئی کاروائی عمل میں نہ لائی گئی ہے۔کروڑوں روپے کی کرپشن میں ملوث ہونے کے باوجود ٹرانسپورٹ آفیسرتعینات کردیاگیاہے۔اس سلسلہ میں جب ثمروحید سے رابطہ کیاگیاتواس نے کال ہی اٹینڈنہ کی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -