گلگشت سب ڈویژن: بجلی چوری میں معاون پرانے الیکٹر ومکینیکل میٹرز کی بھرمار 

گلگشت سب ڈویژن: بجلی چوری میں معاون پرانے الیکٹر ومکینیکل میٹرز کی بھرمار 

  

 ملتان(نیوز رپورٹر)ملتان شہر کے سب سے بڑے کمرشل علاقہ گلگشت کی مارکیٹوں، پلازوں اور ہوسٹلز میں بجلی چوری (بقیہ نمبر35صفحہ6پر)

کرنے میں معاون ثابت ہونیوالے پرانے الیکٹرو مکینیکل میٹروں کی بھرمار، میپکو انتظامیہ کی جانب سے 2020 کے اوائل میں الیکٹرو مکینیکل میٹروں کے متبادل ڈیجیٹل میٹروں کی تنصیب بارے واضح احکامات دیئے گئے تھے لیکن گلگشت سب ڈویژن کے عملہ کی جانب سے دانستہ تاخیری حربے اختیار کیئے جارہے ہیں جبکہ گھریلو صارفین کے 90 سے 95 فیصد تک ڈیجیٹل میٹر نصب کردیئے گئے ہیں اس کے برعکس کمرشل ایریاز میں 75 سے 80 فیصد تک الیکٹرو مکینیکل میٹرز لگے ہوئے ہیں جو کہ گلگشت سب ڈویژن کے عملہ کی ملی بھگت سے بجلی چوری کا ایک بڑا موثر ذریعہ ثابت ہورہے ہیں ذرائع کے مطابق میپکو انتظامیہ کی ڈیجیٹل میٹرز کی تنصیب بارے واضح ہدایات کو تین سال گزرنے کے باوجود ملتان شہر کی سب سے بڑے کمرشل علاقہ کی مارکیٹوں، پلازوں اور ہوسٹلز میں بدستور پرانے میٹرز میپکو حکام کا منہ چڑا رہے ہیں ذرائع کے مطابق گلگشت سب ڈویژن سے منسلک علاقہ میں بیسیوں پرائیویٹ سکولز، درجنوں ہوسٹلز، کمرشل مارکیٹس اور پلازوں کو بجلی چوری کرنے کے لیئے باقاعدہ میپکو عملہ تعاون فراہم کرتا ہے جبکہ میپکو قواعد کے برعکس گلگشت کی مختلف شاہراوں پر برلب سڑک لگے ٹھیلوں کو بھی بجلی فراہم کی جارہی ہے لیکن میپکو انتظامیہ نے اس ضمن میں چشم پوشی والی روش اختیار کی ہوئی ہے گلگشت سب ڈویژن میں یونین عہدیدار رانا شاہد کے خلاف صارفین کی بیسیوں شکایات اور معاملات کنزیومر کورٹ تک پہنچنے کے باوجود میپکو ایس ای ملتان سرکل اور ایکسئن سمیت افسران سب ڈویژن گلگشت کا نیٹ ورک توڑنے میں بے بس نظر آتے ہیں ایک ذرائع کے مطابق یونین عہدیدار انصر اور سرغنہ رانا شاہد ماہانہ لاکھوں روپے مالیت کی بجلی متعدد دکانوں، ہوسٹلز کو چوری کروانے میں ملوث ہیں اور اس مقصد کے لیئے گلگشت ایریا میں باقاعدہ ایجنٹ مقرر کر رکھے ہیں صارفین نے چیف ایگزیکٹو میپکو سے استدعا کی ہے کہ گلگشت سب ڈویژن میں اس منظم گروہ کو فوری طور پر ٹرانسفر کیا جائے تاکہ چوری ہونیوالی بجلی کے واجبات گھریلو صارفین ادا کرنے سے نجات پائیں،

مزید :

ملتان صفحہ آخر -