سفید مکھی انتہائی نقصان دہ کیڑاکپاس کی آمدہ فصل کیلئے بہت بڑا خطرہ ہے، محکمہ زراعت

سفید مکھی انتہائی نقصان دہ کیڑاکپاس کی آمدہ فصل کیلئے بہت بڑا خطرہ ہے، محکمہ ...

ملتان (این این آئی)محکمہ زراعت کے ماہرمہرعابد حسین نے کہا ہے کہ سفید مکھی ایک انتہائی نقصان دہ کیڑاکپاس کی آمدہ فصل کیلئے ایک بہت بڑا خطرہ ہے۔کپاس کی کامیاب فصل کے حصول کیلئے کاشتکار اس وقت بہاریہ فصلات پرسفید مکھی کے تدارک کو یقینی بنائیں اور محکمہ زراعت کی سفید مکھی کے تدارک کی مہم میں بھرپور حصہ لیں تاکہ آنے والی کپاس کی فصل کو اس موذی کیڑہ کے حملہ سے بچایا جا سکے۔ کاشتکارسفید مکھی کے کامیاب تدارک کیلئے محکمہ زراعت کی سفارشات پر عمل کریں۔ سفید مکھی کپاس کی فصل کیلئے ایک انتہائی نقصان دہ کیڑا ہے جو سارا سال متحرک رہتا ہے۔سفید مکھی کپاس کے علاوہ دیگر پودوں پر بھی پرورش پاتی ہے۔ سفید مکھی کے میزبان پودوں میں فصلات، سبزیات، باغات اور دیگر جڑی بوٹیاں بھی شامل ہیں۔ مہر عابد حسین نے کہا کہ سفید مکھی کی میزبان فصلات میں مکئی،جوار، تمباکو، سورج مکھی،لوسرن اور برسیم شامل ہیں۔ اسی طرح سفید مکھی کی میزبان سبزیات میں گوبھی، مولی، شکرقندی، بینگن، بھنڈی توری، خربوزہ، تربوز، مرچ، پالک، چپن کدو، ٹماٹر،پیاز، مٹر اور آلو وغیرہ ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ باغات میں سفید مکھی کے میزبان پودوں میں لیچی،ترشاوہ پھل،انار، بیر، امرود، شہتوت اور پپیتا شامل ہیں جبکہ سفید مکھی کی میزبان جڑی بوٹیوں میں لیہلی، مکو، مینا، کرنڈ اور گارڈینیا شامل ہیں۔ کاشتکار ان میزبان پودوں پر سفید مکھی کے تدارک کیلئے خاص توجہ دیں۔کاشتکار بہاریہ فصلات اور سبزیات کی باقیات کو برداشت کے بعد فوری تلف کر دیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ کپاس کی کاشت کے علاقوں میں اور کپاس کے کھیتوں کے قریب بھنڈی توری، بینگن اور جوار کاشت نہ کریں، کھیتوں اور کھالوں کو جڑی بوٹیوں سے پاک رکھیں۔بہاریہ فصلات پر سفید مکھی کے کیمیائی تدارک کیلئے محکمہ زراعت کے مقامی ماہرین کے مشورہ سے ایسی زہریں استعمال کریں جو سفید مکھی کے تدارک کیلئے مؤثر اور مفید کیڑوں کیلئے محفوظ ہوں۔مہر عابد حسین نے کہا کہ امسال کپاس کی کامیاب فصل اور بہترین پیداوار کاشتکاروں، محکمہ زراعت اور دیگر تمام اسٹیک ہولڈرز کیلئے ایک بہت بڑا چیلنج ہے۔ انہوں نے کاشتکاروں اور دیگر تمام اسٹیک ہولڈرز کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ بہترین حکمت عملی اور محنت سے ہم کپاس کی بھرپور فصل کے حصول میں نہ صرف کامیاب ہو سکتے ہیں بلکہ ملکی معیشت کو مستحکم بنا کو دنیا میں ایک بہترین مقام حاصل کر سکتے ہیں۔ لہٰذا تمام اسٹیک ہولڈرز اپنا اپنا کردار ادا کریں۔

مزید : کامرس