انوارالعلوم کے جلسہ سے فارغ ہو کر میدان سیاست میں اترونگا، حامد سعید

انوارالعلوم کے جلسہ سے فارغ ہو کر میدان سیاست میں اترونگا، حامد سعید

ملتان (سٹی رپورٹر)سابق وفاقی وزیر مذہبی امور سید حامد سعید کاظمی نے کہا ہے کہ ہم محب وطن ہیں، لوگ اپنی شرافت کی سند لینے کے لئے ہمارے خاندان کے پاس آتے ہیں، پاکستان کو غیر ملکی قوتوں کا اکھاڑہ نہیں بننے دیں گے، جامعہ انوار العلوم کے سالانہ جلسہ سے فارغ ہوکر میں میدان میں (بقیہ نمبر58صفحہ12پر )

ہوں گا۔ منیٰ میں حج انتظامات میں کوتاہی کا ذمہ دار میں نہیں بلکہ سعودی کنٹریکٹر تھا جس پر سعودی حکومت نے ہرجانے کے طور پر 45 کروڑ کا چیک بھی دیا۔ حج کرپشن کیس میں میری بریت سے حکومت کی ناکامی نہیں ہوئی کیونکہ جب یہ الزام لگائے گئے اس وقت موجودہ گورنمنٹ نہیں تھی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اسلام آباد سے ملتان پہنچنے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ان کے بڑے بھائی و امیر جماعت اہل سنت پاکستان علامہ سید مظہر سعید کاظمی اور صاحبزادے سید احمد سعید کاظمی سمیت بڑی تعداد میں عقیدت مند بھی موجود تھے۔ سید حامد سعید کاظمی کا مزید کہنا تھا کہ عوام کی عدالت سے تومیں پہلے بھی سرخرو تھا۔ غلط الزام پر اعظم سواتی کے خلاف میں نے ہتک عزت کا دعویٰ کیا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے پیپلز پارٹی چھوڑی نہیں ہے، اگر کوئی اختلاف سامنے آئے گا تو دیکھیں گے، آئندہ دو تین ہفتوں میں سیاسی صورتحال تبدیل ہو سکتی ہے اس لئے اس وقت یہ سوال قبل از وقت ہے۔ آئندہ عام انتخابات میں حصہ لینے کا سوال بھی قبل از وقت ہے، حالات کا جائزہ لے کر فیصلہ کروں گا۔ اگر آصف علی زرداری مجھے مبارکباد دینے آئے تو یہ میری عزت افزائی ہو گی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر