خیبرایجنسی ،قبائلی ٹرانسپورٹروں کا لنڈی کوتل بازار میں مظاہرہ

خیبرایجنسی ،قبائلی ٹرانسپورٹروں کا لنڈی کوتل بازار میں مظاہرہ

خیبر ایجنسی ( بیورورپورٹ)قبائلی ٹر انسپورٹروں نے لنڈ یکوتل بازار میں احتجاجی مظاہرہ کیا ،قبائلی ٹرانسپوٹروں کے لئے پاسپورٹ کی شرط ختم کرنے اور ایک مہینہ بارڈربندش کے وقت دیہاڑی دینے کا مطالبہ کیا مطالبات نہ ماننے کی صورت میں پورے ملک میں احتجاج کر ینگے ، پاسپورٹ رکھنا بارڈر منیجمنٹ پالیسی کا حصہ ہے ، پولیٹیکل انتظامیہ کا مؤقف ۔ طورخم بارڈر پر سینکڑوں ٹرانسپورٹروں نے پہلے طورخم کے نائب تحصیلدار سے ملاقات کر کے ان سے مطالبہ کیا کہ ٹرانسپورٹروں کو پاسپورٹ کی شرط سے مستثنیٰ قرار دیا جائے جس کے جواب میں ذرائع کے مطابق طورخم کے تحصیلدار نے ٹرانسپورٹروں پر واضح کر دیا کہ پاسپورٹ رکھنا پاکستانیوں کے لئے پالیسی کا حصہ ہے تاہم ان کے مطالبات اور تحفظات سے اعلیٰ حکام کو آگاہ کر دیا جائیگا گاڑیوں ٖڈرائیوروں نے لنڈ یکوتل بازار میں احتجاجی مظاہرہ کیا جن کی قیادت شاکر آفریدی کر رہے تھے اور اپنے مطالبات کے حق میں نعرے لگائے ان کا کہنا تھا کہ افغانستان جانے اور وہاں سے واپس آنے کے لئے قبائلی ٹرانسپورٹروں کو پاسپورٹ کی شرط سے مستثنیٰ قرار دیا جائے تاکہ ان کو آنے جانے میں مشکلات کا سامنا نہ ہو انہوں نے یہ بھی کہا کہ چونکہ افغان حکومت ٹرانسپورٹروں سے پاسپورٹ کا مطالبہ نہیں کرتی اس لئے پاکستانی حکومت بھی لچک کا مظاہرہ کریں تاکہ ٹرانسپورٹروں کو پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے مظاہرین نے کہا کہ حکومت کے اس فیصلے سے سینکڑوں ٹرانسپورٹروں کو راستوں میں اور طورخم میں گاڑیاں کھڑی کرنا پڑیں اب چونکہ ڈرائیوروں اور کنڈکٹروں کے پاس پاسپورٹ نہیں اس لئے ان کو جانے دیا جائے مظاہرین نے یہ بھی کہا کہ ان کو گزشتہ ایک ماہ کے تاوان کی ادائیگی کی جائے انہوں نے دھمکی دی کہ اگر ان کے جائز مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو وہ مجبوراً احتجاج کرنے پر مجبور ہونگے اور پورے پاکستان میں پہیہ جام ہڑتال کرینگے ۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...