کمسن بچے سے بد فعلی کرنیوالے ملزمان کی سزا کالعدم

کمسن بچے سے بد فعلی کرنیوالے ملزمان کی سزا کالعدم

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس روح الامین چمکنی نے کمسن بچے سے بدفعلی کرنے پر20سال قید بامشقت اور20ہزار روپے جرمانہ کی سزاپانے والے دوملزم بھائیوں کی اپیل منظورکرکے سزاکالعدم قرار دے دی ملزموں کی جانب سے علی زمان ایڈوکیٹ نے اپیلوں کی پیروی کی استغاثہ کے مطابق ملزمان احمدحسن اورگلزارحسن ساکنان سرڈھیری چارسدہ پرالزام ہے کہ انہوں نے 6اپریل2014 کو نصراللہ نامی بچے کو بدفعلی کانشانہ بنایااورماتحت عدالت نے جرم ثابت ہونے پرملزموں کو فی کس 10سال قید بامشقت اور10ہزار روپے جرمانہ کی سزاسنائی اس موقع پر ملزموں کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مقدمے میں تین بھائیوں کو ملزمان نامزدکیاگیاہے جبکہ یہ ممکن ہی نہیں کہ تین بھائی اکٹھے مل کرکسی لڑکے سے زیادتی کریں بلکہ بھائیوں کوبدنیتی کی بناء پرملزمان نامزد کیاگیاہے اورماتحت عدالت نے بیشتر شہادتوں کو نظراندازکیاہے عدالت نے دوطرفہ دلائل مکمل ہونے پرملزم بھائیوں کی اپیل منظورکرکے سزا کالعدم قرار دے دی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر