عمران خان نے پانامہ کیس کا فیصلہ آنے کے بعد ایل این جی معاہدے کو چیلنج کرنے کا اعلان کردیا

عمران خان نے پانامہ کیس کا فیصلہ آنے کے بعد ایل این جی معاہدے کو چیلنج کرنے کا ...
عمران خان نے پانامہ کیس کا فیصلہ آنے کے بعد ایل این جی معاہدے کو چیلنج کرنے کا اعلان کردیا

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے پانامہ کیس کا فیصلہ آنے کے بعد ایل این جی معاہدے کو چیلنج کرنے کا اعلان کردیا ہے۔تفصیلات کے مطابق لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سربراہ پی ٹی آئی نے کہا کہ امید ہے کہ آئندہ ہفتے پانامہ کیس کا فیصلہ آجائے گا اس کے بعد قطر کے ساتھ ایل این جی معاہدے پر سپریم کورٹ جائیں گے کیونکہ 200 ارب کو پورٹ قاسم میں کنٹریکٹ بغیر بڈنگ کے دیدیا گیا،ہرسال 10 ارب ڈالر کی منی لانڈرنگ کی جارہی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ ساری قوم پانامہ کیس کے فیصلے کا انتظار کررہی ہے،سپریم کورٹ کیس کا جو بھی فیصلہ کرے گی اس سے نئے دور کا آغاز ہوگا،تاریخ میں پہلی مرتبہ ہورہا ہے کہ کسی طاقتور آدمی کا احتساب اور تلاشی لی جارہی ہے،جس طرح عدالت چیزیں سامنے لے کر آئی ہے اس سے پاکستان کے ادارے ساری قوم کے سامنے آگئے ہیں کہ ان کی کارکردگی کیا ہے۔پی ٹی آئی چیئرمین کا کہنا تھا کہ قطری خط ون اور ٹو اس لئے سامنے لایا گیا کیونکہ نواز شریف کی منی لانڈرنگ کو چھپایا جاسکے اور حکمران سمجھ رہے ہیں کہ ہیلی کاپٹر کیس کی طرح قطری خط پھر بچالے جائیگا۔عمران خان نے مزید کہا کہ اصل منی ٹریل اسحاق ڈار کا اعترافی بیان ہے،سعید احمدنے اسحاق ڈار کے حوالے سے لکھا تھا کہ انہوں نے منی لانڈرنگ کراوائی اور اب اسی سعید احمد کو نیشنل بنک کاچیئرمین بنا دیا گیا ہے،پتہ نہیں سٹیٹ بنک نے ان کی تقرری کی اجازت کیسے دیدی،سٹیٹ بنک کی رپورٹ کے مطابق ہرسال10 ارب دالر کی منی لانڈرنگ ہوتی ہے۔

انہوں نے کہاکہ حسین حقانی نے وہی چیز کنفرم کی ہے جو ہم کو پہلے سے ہی پتہ تھی،پانامہ،میمو گیٹ اور ڈان لیکس سب ایک ہی چیز ہے۔حکمرانوں کی اولادیں،سرمایہ سب کچھ باہر ہے۔عمران خان نے کہا کہ یہ لوگ بھارت اور امریکہ کوخفیہ پیغام دیتے ہیں کہ ہماری فوج ساتھ نہیں ہے اورپبلک میں کہتے ہیں کہ فوج اور حکومت ایک پیج پر ہے،یہ کوئی طریقہ نہیں کہ آپ اپنی فوج کو بدنام کررہے ہیں۔خیبر پختونخوا کی پولیس کو ناصر درانی نے آئیڈیل بنادیا ہے وہ پنجاب میں اس لئے کامیاب نہیں ہوسکے کیونکہ فیصلے رائیونڈ سے ہوتے ہیں جب فیصلے رائیونڈ سے ہونگے تو نتائج کچھ نہیں نکلیں گے۔پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان نے کہا کہ آصف زرداری نیب کو دھمکی دی رہے ہیں کہ نیب ان کو نہیں پکڑ سکتی جب اسحاق ڈار کو نیب نہیں پکڑ سکتی تو زرداری کو کیسے پکڑ سکتی ہے،جب نیب کا چیئرمین زرداری اور نواز شریف کی مرضی سے بنا ہو تو کیسے کوئی ہاتھ لگا سکتا ہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں