یہ شخص کسی بھی جہاز میں سوار ہوا تو کوئی پائلٹ طیارہ نہیں اڑائے گا ،رکن پارلیمنٹ کی ایسی حرکت کہ ملک بھر کی فضائی کمپنیوں نے’’ایکا ‘‘ کرتے ہوئے بڑا اعلان کر دیا

یہ شخص کسی بھی جہاز میں سوار ہوا تو کوئی پائلٹ طیارہ نہیں اڑائے گا ،رکن ...
یہ شخص کسی بھی جہاز میں سوار ہوا تو کوئی پائلٹ طیارہ نہیں اڑائے گا ،رکن پارلیمنٹ کی ایسی حرکت کہ ملک بھر کی فضائی کمپنیوں نے’’ایکا ‘‘ کرتے ہوئے بڑا اعلان کر دیا

  


نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارت کی انتہا پسند ہندو تنظیم شیو سینا کے رکن پارلیمنٹ رویندر گائیکوواڑ کو ہندوستانی ائیر لائن’’ائیر انڈیا ‘‘ کے ملازم کو  جوتیاں مارنا مہنگا پڑ گیا ،بھارت کی سرکاری کمپنی ’’ائیر انڈیا ‘‘ سمیت  ہندوستان کی7فضائی کمپنیوں نے رویندر گائیکوواڑ پر  اپنی پروازوں  کے دروازے بند کرتے ہوئے فضائی سفر پر پابندی عائد کر دی ،ائیر انڈیا کے پائلٹوں نے وزارت شہری ہوا بازی کو دھمکی دے دی کہ اگر ان کے جہازمیں رویندر گائیکوواڑ بیٹھیں گے تو وہ جہاز ہی نہیں اڑائیں گے ۔

مزید پڑھیں:’افغان طالبان کو اسلحہ پاکستان نہیں بلکہ یہ ملک فراہم کررہا ہے۔۔۔‘ امریکہ نے ایک ایسے ملک کا نام لے لیا کہ جان کر دنیا دنگ رہ گئی، کونسا ملک ہے؟ آپ کے بھی تمام اندازے غلط ثابت ہوجائیں گے

بھارتی نجی چینل ’’انڈیا ٹی وی ‘‘ کے مطابق ہندوستان کی سرکاری ائیر لائن ’’ائیر انڈیا ‘‘ کے ایک ملازم کو دوران پرواز جوتے سے پیٹنے والے انتہا پسند ہندو تنظیم ’’شیو سینا کے رکن پارلیمنٹ رویندر گائیکوواڑ کو ائیر انڈیا سمیت 7دیگر کمپنیوں نے فضائی سفر کے لئے ناپسندیدہ اور ممنوعہ شخصیات میں شامل کر لیا ہے ،ساتھ ہی ایئر انڈیا کے پائلٹوں نے بھی وزارت شہری ہوا بازی کو خط لکھ کر کہا ہے کہ اگر کسی فلائٹ میں مسٹر گائکوواڑبیٹھے ہوں گے تو وہ ہوائی جہاز ہی نہیں اڑائیں گے،ائیر انڈیا سمیت دیگر 7فضائی کمپنیوں کا کہنا ہے کہ ان کے جہازوں میں شیو سینا کے رکن پارلیمنٹ کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے ۔جبکہ ائیر انڈیا نے اس پابندی پر فوری عملدارآمد کرتے ہوئے آج ہی ان کی پونے کی ٹکٹ منسوخ کر دی ہے جبکہ ائیر انڈیا سے ٹکٹ منسوخ ہونے کے بعد رویندر گائیکوواڑ نے ’’انڈیگو ائیر لائن‘‘ کی ٹکٹ خرید لی جس پر اس فضائی کمپنی نے بھی کچھ دیر بعد ان کی ٹکٹ منسوخ کر دی جبکہ دہلی ائیر پورٹ کے ٹرمینل تھری پر سیکیورٹی بھی بڑھا دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ رویندر گائیکوواڑ ایک روز قبل صبح کے وقت پونے سے دہلی آئے تھے ،ان کے پاس بزنس کلاس کا اوپن ٹکٹ تھا لیکن انہوں نے پرواز نمبر اے ای 852میں ٹکٹ بک کرایا جس میں تمام نشستیں اکانومی کلاس کی ہوتی ہیں ،فلائٹ میں بزنس کلاس نہ دینے پر انہوں نے دہلی پہنچنے پر شدید ہنگامہ آرائی کی، جب ائیر لائن کا ایک افسر ان سے بات کرنے کے لئے آیا تو انہوں نے اس کی جوتوں سے دھلائی کر دی تھی۔بھارت کی تمام ائیر لائن کمپنیوں نے انتہا پسند ہندو تنظیم کے رکن پارلیمنٹ کی اس قبیح حرکت کی شدید مذمت کرتے ہوئے اپنی پروازوں پر انکے سفر کرنے پر پابندی عائد کر دی ہے ۔شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ رویندر گائیکو واڑ نے ایک اور بھارتی نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے انتہائی ڈھٹائی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ انہیں اپنے کئے پر کوئی شرمندگی نہیں ہے ،سرکاری ائیر لائن کے ملازم نے مجھ سے بے ادبی سے بات کی جسے پیٹنا لازم ہو گیا تھا۔

دوسری طرف فیڈریشن آف انڈین ایئر لائنز (ایف آئی اے) اور ایئر انڈیا نے ایک مشترکہ بیان جاری کر تے ہوئے کہا ہے کہ ایئر انڈیا اور ایف آئی اے کے رکن ا یئر لائنس کمپنیوں نیشیو سینا کے رکن رویندر گائیکو واڑ کے اپنی کسی بھی پرواز میں سفر کرنے پر فوری پابندی لگا دی ہے، اس طرح کے معاملات میں ’’ایف آئی اے‘‘ کو اس طرح کی مثالی کارروائی کرنی چاہیے جس سے ملازمین کا حوصلہ اور عام لوگوں کی سلامتی بحال رہے۔فیڈریشن کے ایسوسی ایٹ ڈائریکٹر اجوول ڈے کا کہنا تھا کہ ہمارے ساتھی ملازمین ، دیگر مسافروں کی سلامتی اور تحفظ کو ذہن میں رکھتے ہوئے ہم نے ایک ’’نو فلائی فہرست ‘‘بنانے کی بھی تجویز رکھی ہیں جس میں تمام ممنوعہ مسافروں کے نام ہوں گے، ایسے مسافروں کو ہماری پروازوں میں سفر کی اجازت نہیں ہوگی۔ انہوں نے مودی حکومت سے رویندر گائیکو واڑ کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی بھی اپیل کی ہے ۔

مزید : بین الاقوامی