قرنطینہ سنڑلاوارث طبیعت خراب ہونے پر زائرین کو مختلف ہسپتالوں میں منتقل کرنیکا انکشاف

قرنطینہ سنڑلاوارث طبیعت خراب ہونے پر زائرین کو مختلف ہسپتالوں میں منتقل ...

  



ملتان (نمائندہ خصوصی‘ نیو زرپورٹر‘ سٹاف رپورٹر)قرنطینہ سنٹر سہولیات سے عاریہے کورونا کے شبہ میں موجود زائرین کو طبعیت خرابی پر مختلف ہسپتالوں میں منتقل کرنا معمول،پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے وفد کا قرنطینہ سینٹر میں بغیر حفاظتی کٹس کام کرنے والے ڈاکٹر اور ہیلتھ سٹاف کا حوصلہ بڑھانے کے لئے کورانٹائن سینٹر کا دورہ،تفصیل کے مطابق قرنطینہ (بقیہ نمبر49صفحہ12پر)

سینٹر میں 45 بستروں پر مشتمل آئی سو لیشن وارڈ اور 14 بستروں پر مشتمل جنرل وارڈ سہولیات جن میں الٹراساونڈ،ای سی جی،وغیرہ شامل نہ ہونے کی وجہ سے فعال نہیں کیا جا سکا ہے جبکہ قرنطینہ سینٹر میں زائرین میں کورونا تشخیص کے لئے کٹس تک موجود نہیں ہیں جس کے باعث زائرین کو قرنطینہ سے مختلف سرکاری ہسپتالوں میں بھیجنا معمول کا حصہ بن چکا ہے،اس حوالے سے گزشتہ روز پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن ملتان کے وفد نے صدر پروفیسر ڈاکٹر مسعود الروف ہراج کی قیادت میں قرنطینہ کا دورہ کیا اور وہاں ڈیوٹی پر موجوڈ ڈاکٹروں اور دیگر ہیلتھ سٹاف سے ملاقات کے دوران انکی ہمت کو داد دیتے ہوئے مسائل بھی سنے،بعدازاں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر طیب خان سے ملاقات کی،اس دوران پروفیسر ڈاکٹر مسعود الروف ہراج نے انہیں بتایا کہ ہیلتھ سٹاف شبہ میں آئے تمام زائرین کو بغیر کسی حفاظتی کٹ کے معائنہ کر رہا ہے،ڈاکٹرز کی ڈیوٹی ٹائمنگ سمیٹ سہولیات مہیا کریں تمام ڈاکٹرز اس جنگ میں ہراول دستے کے طور پر لڑنے کے لئے تیار ہیں۔پی ایم اے ملتان ڈاکٹرز کے شانہ بشانہ ہے اور مریضوں کو بہترین علاج مہیا کرنے کے لئے ہر وقت تیار ہے۔اسکے علاوہ قرنطینہ سے مشتبہ افراد کو سہولیات نہ ہونے کے باعث مختلف سرکاری ہسپتالوں میں بھیجا جا رہا ہے جس کے باعث کورونا پھیلنے کا خدشہ ہے اس حوالے سے فوری اقدامات اٹھائے جائیں وفد میں ڈاکٹر رانا خاور،ڈاکٹر شیخ عبدالخالق،ڈاکٹر وقار نیازی اور ڈاکٹر ذوالقرنین حیدر سمیت دیگر موجود تھے.نشترمیڈیکل یونیورسٹی ہسپتال میں عوام الناس کی سہولت کے لئے ٹیلی فون پر24گھنٹے فری طبی مشورے کی سہولت کاآغاز 24مارچ آج بروز منگل 12بجے دوپہر کردیاجائے گا. اس حوالے سے وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر مصطفی کمال پاشا کا کہنا تھا کہ ملک بھرمیں کروناوائرس کے منڈلاتے خطرات اوراس کے انسانی جانوں وصحت پرخطرناک اثرات سے بچاؤ کے لئے عوام الناس سے گزارش ہے کہ کسی بھی طبی /جراحی مشورہ کے لئے ہسپتال آنے کی بجائے فون پرمہیاسہولت سے فائدہ اٹھائیں،فراہم کئے جانے والے ٹیلی فون نمبروں پردن رات ڈاکٹر آپ کومشورہ دینے کے لئے موجود رہیں گے،ٹیلی فون پر موجودطبی عملہ نہ صرف کرونا کے بارے میں عوام الناس کوآگاہی دیں گے بلکہ کسی بھی حادثاتی صورتحال میں مناسب مشورہ کے لئیمیڈیسن, سرجری, امراض اطفال,امراض نسواں اورآنکھوں کے امراض کے لئے سپیشلسٹ ڈاکٹروں سے آپ کی بات بھی کرائی جاسکتی ہے،24گھنٹے فری میڈیکل ہیلپ لائن کے لئے ان نمبروں پررابطہ کیا جا سکتاہے جبکہ صوبائی وزیر توانائی ڈاکٹر اختر ملک نے لیبر کمپلکس میں قائم قرنطینہ سنٹر کا اچانک دورہ کیا۔کمشنر ملتان ڈویڑن شان الحق اور ڈپٹی کمشنر عامر خٹک بھی انکے ہمراہ تھے۔اس موقع پر صوبائی وزیر ڈاکٹر اختر ملک نے زائرین کو کھانے،علاج معالجے کی فراہمی کا جائزہ لیا۔انہوں نے کہا کہ قرنطینہ سنٹر میں بہترین انتظامات کئے گئے ہیں۔قرنطینہ میں ڈیوٹی دینیوالیڈاکٹرز،افسران و سٹاف ہمارے ہیرو ہیں۔ کمشنر ملتان ڈویڑن شان الحق نے کہا کہ حکومت کرونا وائرس کے روک تھام کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کررہی ہے۔قرنطینہ میں مقیم افراد کو ایک دوسرے سے میل جول کی ہرگز اجازت نہ ہے۔ انہوں نے شہریوں سے اپیل کی کہ انتظامیہ شہریوں کو کرونا وائرس سے بچانے کیلئے سرگرم ہے،شہری بھرپور تعاون کریں۔ ڈپٹی کمشنر عامر خٹک نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ قرنطینہ کی سات بلڈنگز کو آپس میں ڈی لنک کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔ قرنطینہ میں 939 مرد، 268 خواتین زائرین مقیم ہیں۔ اس موقع پر فوکل پرسن قرنطینہ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو طیب خان، اے سی صدر شہزد محبوب بھی موجود تھے۔ حکومت پنجاب کی ہدایت پر ملتان قرنطینہ میں مقیم زائرین کے گھروں پر راشن کی فراہمی کے لیے فہرستیں تیار کر لی گئی ہیں۔ملتان قرنطینہ میں پنجاب کے 34 اضلاع کے زائرین مقیم ہیں۔ڈپٹی کمشنر عامر خٹک نے تمام متعلقہ اضلاع کے ڈپثی کمشنرزکو زائرین کے گھروں کے پتے فراہم کر دئے ہیں۔ان اضلاع میں زائرین کی فیملیز کو 15 دن کا راشن فراہم کیا جائے گا۔ہر گھر میں اشیائے ضروریہ پر مشتمل دو راشن بیگ اور ایک آٹے کا تھیلا پہنچایا جائے گا۔قرنطینہ میں بہاولپور کے 17،رحیم یارخان 32, ملتان71،لودھراں 32،خانیوال7 اور وہاڑی کے 12 زائرین مقیم ہیں۔ڈی جی خان 11، لیہ 71،مظفر گڑھ75 اور راجن پور کے 53،سرگودھا 52،میانوالی 10، خوشاب 29، بھکر کے 40،:جہلم 11,اٹک 17, چکوال 9, ساہیوال کے6،لاہور63،شیخوپورہ 14, ننکانہ11,گوجرانوالہ 122،حافظ آباد29,سیالکوٹ 95,گجرات 36 اور منڈی بہاوالدین کے 84،فیصل آباد30,جھنگ114,ٹوبہ ٹیک سنگھ5 اور چینیوٹ کے 6،راولپنڈی 8، پاکپتن اور اوکاڑہ کا ایک ایک زائر شامل ہیں۔

وہاڑی‘ بہاولپور‘ میاں چنوں‘ لودھراں‘ رحیم یار خان‘ عبدالحکیم‘ خانیوال‘ ڈیرہ غازیخان (بیورو رپورٹ‘ سٹی رپورٹر‘ نمائندہ پاکستان‘ ڈسٹرکٹ بیورو رپورٹ‘ڈسرکٹ رپورٹر وہاڑی (بیورورپورٹ + سٹی رپورٹر)کرونا وائرس کی حفاظتی اقدامات کے حوالے سے ڈی سی کمپلکس وہاڑی میں اسٹیشن کمانڈر بریگیڈئیر عظیم فاروق ڈپٹی کمشنر کپیٹن (ر) وقاص رشید،ڈی پی او (بقیہ نمبر50صفحہ12پر)

وہاڑی احسان اللہ چوہان کی صدارت میں اہم اجلاس منعقد ہوااجلاس میں ضلعی انتظامیہ اور آرمی افسران سمیت تمام محکموں کے افسران نے شرکت کی اور کرونا وائرس کے لیے کئے گئے حفاظتی اقدامات کا جائزہ لیااجلاس میں کرونا وائرس سے نمپٹنے کے لیے جامع حکمت عملی مرتب کی گئی اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے اسٹیشن کمانڈر بریگیڈئیر فاروق عظیم۔نے کہا کہ کرونا وائرس کی صورتحال میں پاک افواج سول انتظامیہ کی مکمل معاونت کرے گی کرونا وائرس سے نمپٹنے کے لیے تمام حفاظتی اقدامات اٹھائے جائیں ہمیں متحد ہوکر کرونا وائرس کے خطرات پر قابو پانا ہے اس کے لیے تمام محکمے متحرک ہوکر کام کریں اس سلسلے میں آرمی کی جس جگہ ضرورت ہوگی فوری سپورٹ مہیا کی جائے گی اور سول انتظامیہ کی ڈیمانڈ کے مطابق مکمل تعاون ہوگا اس کے علاوہ پاکستان آرمی کے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف کی سپورٹ بھی مہیا کی جائے گی پٹواری اور نمبردار اپنے علاقوں میں دوسرے شہر سے آنے والے لوگوں کے بارے میں انتظامیہ کو اطلاع دیں تاکہ فوری طور پر اس کا بندوبست کیا جاسکے بریگیڈئیر عظیم فاروق نے مزید کہا کہ ضرورت پڑنے پر آرمی و پولیس کا مشترکہ فلیگ مارچ بھی کیا جائے گا تاکہ سیکورٹی انتظامات کا جائزہ لیا جاسکے اس موقع پر ڈپٹی کمشنر کیپٹن (ر) وقاص رشید نے بریفننگ دیتے ہوئے کہا کہ کرونا وائرس سے بچاو کے تمام اقدامات مکمل کرلئے گئے ہیں ضلع وہاڑی میں 6 قرنطینہ سینٹرز بنا دئیے گئے ہیں جس میں ایک ہزار لوگوں کو رکھنے کی گنجائش موجود ہے اس کے علاوہ ضرورت پڑنے پر مزید قرنطینہ سینٹرز بنائے جارہے ہیں حکومت کی ہدایات پر تمام وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں ڈپٹی کمشنر کیپٹن (ر) وقاص رشید نے مزید بتایا کہ ڈی ایچ کیو اور ٹی ایچ کیو ہسپتالوں میں آئسولیشن وارڈ فنکشنل ہیں اس کے علاوہ دانش سکول ٹبہ سلطانپور کو بھی آئسولیشن سینٹر میں تبدیل کرنے کے علاوہ آرایچ سی اور بی ایچ یو میں بھی آئسولیشن کی سہولت فراہم کی جائے گی فوڈ کی سپلائی چین کے حوالے سے مکمل پلان بنالیا گیا ہے اس بات کا خصوصی خیال رکھا جائے گا کہ کسی کو خوراک۔سپلائی بارے مشکل نہ ہو تمام دیہاتوں اور یونین کونسل کی سطح پر انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں قرنطینہ سینٹرز اور آئسولیشن وارڈ میں ڈاکٹرز اور سٹاف ڈیوٹیوں پر موجود ہیں ڈسٹرکٹ پولیس افیسر وہاڑی احسان اللہ چوہان نے کہا کہ دفعہ 144 پر مکمل عملدرآمد کروایا جارہا ہے اس کے علاوہ پولیس ضلعی انتظامیہ کی مکمل معاونت کررہی ہے دفعہ 144 پر عملدرامد کے لیے مکمل اقدامات کیے جارہے ہیں۔ کوروناوائرس سے بچاؤ اور جراثیم کے خاتمہ کیلئے ضلعی انتظامیہ کی ہدایات پر عمل درآمدکرتے ہوئے بلدیہ کی طرف سے شہر اور گردونواح میں کلورین سے پانی کا سپرے کیاجارہاہے اورشہریوں کوکورونا سے بچاؤ کیلئے تمام تر احتیاطی تدابیر پر عمل درآمدیقینی بنانے کی ہدایات بھی جارہی ہیں واقعات کے مطابق گزشتہ روز کوروناوائرس سے بچاؤ اور خطرناک جراثیم کے خاتمہ کیلئے ضلعی انتظامیہ کی ہدایات کے مطابق بلدیہ کی طرف سے شہر بھر کے تمام نجی اور سرکاری دفاتر، گلیوں بازاروں اور سڑکوں پر اور گردونواح میں کلورین ملے سپرے کاچھڑکاؤ کیا جارہاہے اور ضلعی انتظامیہ کی طرف سے شہریوں کو گھروں میں رہتے ہوئے خود اور دوسروں کی زندگیاں محفوظ بنانے کی ہدایات کی گئی ہیں۔حکومت پنجاب کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے بہاول پور ڈویژن کی تمام تحصیلوں میں قائم بس اسٹینڈز ریلوے اسٹیشن، مراکز صحت، تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں اورڈی ایچ کیوز سمیت بہاول وکٹوریہ ہسپتال میں ممکنہ کورونا وائرس کے سدباب کے لئے احتیاطی تدابیر کے تحت جراثیم کش واشنگ آپریشن کیا گیا۔واشنگ آپریشن کے تمام امور کی نگرانی متعلقہ تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز نے کی۔ اس موقع پر ریسکیو 1122کا عملہ بھی موجود تھا۔ بس اسٹینڈز، ریلوے اسٹیشن، ہسپتالوں و مراکز صحت کی صفائی کرتے ہوئے تمام حصوں پر کلورین اور ڈیٹول ملے محلول سے سپرے کیا گیا۔دورانہ آپریشن عوامی مقامات کی کوئی ایسی جگہ نہ چھوڑی گئی جہاں جراثیم کا خدشہ موجود ہو۔یاد رہے کہ اس سلسلہ میں متعلقہ محکمے مربوط حکمت عملی کے تحت مسلسل اقدامات اٹھا رہے ہیں۔ ریسکیو1122 کی جانب کرونا وائرس کے پیش نظر حفاظتی اقدامات کے طور سپرے دوسرے روز بھی جاری ریسکیو 1122 کے جوانوں نے میاں چنوں سمیت ضلع بھر میں مختلف مقامات جن سبزی منڈی، بس سٹینڈز، ریلوے اسٹیشن سرکاری دفاتر وغیرہ پر سپرے کیا اس موقع ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ریسکیو 1122ڈاکٹر اعجاز انجم نے کہا کہ عوام اس مشکل گھڑی میں حکومت کا ساتھ دیں گھروں میں رہیں تاکہ اس وباء سے بچا جا سکے کسی بھی ایمرجنسی کی صورت میں فورا 1122 پر کال کریں۔ حکومت پنجاب کے احکامات پرکورونا وائرس سے بچاؤ کے احتیاطی اقدامات کے تحت ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدایت پر ضلع بھر کے اسسٹنٹ کمشنرز کی زیر نگرانی ریسکیو1122 اور میونسپل کارپوریشن و ٹاؤن کمیٹیز کے عملہ نے جنرل بس سٹینڈ‘ ریلوے اسٹیشن‘ ائیر پورٹ ودیگر پبلک مقامات پر بھرپور واشنگ آپریشن کیا تاکہ جراثیم کے خدشات کو ختم کیا جاسکے۔واشنگ آپریشن کے دوران جنرل بس سٹینڈ‘ ریلوے اسٹیشن‘ ائیر پورٹ کے بیز‘فٹ پاتھ ودیگر حصوں کی جامع صفائی کی گئی۔ڈپٹی کمشنر نے تمام تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ مسافر ٹرانسپورٹس اڈوں‘ ریلوے اسٹیشن‘ ائیر پورٹ ودیگر مقامات کی صفائی کا عمل مستقل بنیادوں پر جاری رہے جس میں کلورین واٹر سے پبلک مقامات کی دھلائی کی جائے۔ پنجاب بھر کی طرح عبدالحکیم میں دوسرے دن بھی شہریوں نے رضاکارانہ طور پرکریانہ و میڈیکل سٹور کے علاوہ تمام دکانیں ومارکیٹیں بند رکھیں،تاہم پنجاب حکومت کی جانب سے تاجرطبقہ وسماجی حلقوں میں 14روزہ لاک ڈاؤن کے اعلان کے ساتھ ہی تشویش پیدا ہوگئی ہے، عبدالحکیم میں دوسرے روز اے سی کبیروالا حافظ مدثرنواز نے غوثیہ چوک عبدالحکیم میں سویٹ،پکوڑوں و فروٹ اورکھانے کی دیگر دکانیں کھلی رکھنے پرمقامی انتظامیہ پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے 12افراد کو گرفتار کرواکر مقدمات کا اندراج کروایااس دوران انہوں نے غوثیہ چوک میں قائم تجاوزات کو بھی ہٹادیا، قبل ازاں اے ڈی ایل جی فیاض خان کھیڑا اور سی این ٹی راؤ نورالحسن اپنی ٹیم کے ہمراہ شہر میں موجود رہے ا۔ کورونا کے خلاف جنگ میں ضلعی انتظامیہ خانیوال کے اقدامات میں تیزی آگئی پاک فوج کے افسران نے ڈپٹی کمشنر آفس میں منعقدہ اجلاس میں شرکت کی جس میں ڈپٹی کمشنر آغا ظہیر عباس شیرازی نے بریگیڈئیر محمد ماجد کو کورونا کے حوالے سے کئے جانے والے حفاظتی اقدامات،کھانے پینے کی اشیاء کی بلاتعطل فراہمی جاری رکھنے بارے اقدامات اور عوام میں آگاہی مہم بارے تفصیلی آگاہ کیا۔اجلاس میں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر محمد علی وسیم،پاک فوج،ضلعی انتظامیہ اور محکمہ صحت کے افسران نے شرکت کی۔ڈپٹی کمشنر نے اس موقع پر کہا کہ ضلع میں کورونا کا تاحال کوئی مریض نہ ہے تاہم اس وائرس کے پھیلنے کے خدشہ کے پیش نظر تمام انتظامات اور تیاریاں مکمل ہیں۔بریگیڈئیر محمد ماجد نے اس موقع پر کہا کہ پاک فوج پوری پاکستانی قوم کے ساتھ کھڑی ہے مشکل گھڑی کا مقابلہ ڈٹ کر کیا جائے گا عوام احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل کریں۔بعد ازاں ڈپٹی کمشنر آغا ظہیر عباس شیرازی اور بریگیڈئیر محمد ماجد نے دیگر سرکاری افسران کے ہمراہ ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال میں قائم کورونا آئسولیشن وارڈ اور خانیوال پبلک سکول خانیوال میں قائم قرنطینہ کا بھی معائنہ کیا اور وہاں پر فراہم کی جانے والی سہولیات کا تفصیلی جائزہ لیا۔ وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان احمد خان بزدار کی ہدایت پر ڈیرہ غازی خان شہر کی شاہراہوں اور ٹیچنگ ہسپتال کی عمارتوں پر کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے جراثیم کش محلول کا سپرے کرایا گیا۔چیف آفیسر کارپوریشن اقبال فرید نے نگرانی کی چیف آفیسرنے کہا کہ کمشنر نسیم صادق کی زیر نگرانی ڈیرہ غازی خان شہر اور ٹیچنگ ہسپتال میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے حوالے سے سپرے مہم جاری ہے کارپوریشن،فائربریگیڈ،ریسکیو اور دیگر محکموں کی بھاری مشینری کے ذریعے جراثیم کش محلول کا سپرے کیا گیا۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل ملک مشتاق حسین نائچ نے کہا ہے کہ ضلعی انتظامیہ لودھراں کی جانب سے اہم عوامی مقامات پر وائرس کش ادویات کا سپرے کیا جارہا ہے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے بس،ویگن اسٹینڈ واڈ اجات سمیت ریلوے اسٹیشن،فیملی ہسپتال، ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال،تینوں تحصیلوں کے تحصیل ہیڈکوارٹرہسپتال،بنیادی مراکز صحت،عمومی طور پر رش والی جگہوں، مارکیٹوں اور دیگر اہم مقامات پر سپرے کیا گیا ہے۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل ملک مشتاق حسین نائچ نے بتایا کہ حکومت پنجاب کی ہدایت پر عوامی مقامات پر سپرے کیا جا رہا ہے جس کا مقصد اْن مقامات کو کورونا وائرس سے پاک کرنا ہے اور وائرس کے تدارک کے لیے اس کے پھیلاؤ اور چین کو توڑنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ عوام کو اپنی مدد آپ کے تحت خود کو گھروں تک محدود کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ یہ ایک قومی ذمہ داری ہے اور کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے سدباب کے لیے اپنا فعال کردار انفرادی و اجتماعی سطح پر ادا کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب تمام حفاظتی اقدامات کو بروئے کار لاتے ہوئے عوام کے تحفظ اور بہتری کے لیے ہر ممکن کوششیں کر رہی ہے تاکہ کوروناوائرس کے ممکنہ حملے سے عوام کو محفوظ رکھا جاسکے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر