گلی محلے سڑکیں گراؤنڈ میں تبدیل دن بھر چھکے چوکے چھتوں پر بوکاٹا کی آوازیں

گلی محلے سڑکیں گراؤنڈ میں تبدیل دن بھر چھکے چوکے چھتوں پر بوکاٹا کی آوازیں

  



ملتان (نیوز رپورٹر) حکومت کی جانب سے کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے اور شہریوں کے تحفظ کے لیئے ابتدائی طور پر دو روزہ لاک ڈاون کرنے کے دوران شہر بھر کے منچلوں نے پتنگ بازی کے لیئے چھتوں کو جبکہ بعض نے محلوں اور گلیوں کو کرکٹ کا میدان بناکر غیر ذمہ دارانہ طرز عمل کی انتہا کردی ہے ا پتنگ بازی جیسے کھیل سے اب تک ملک بھر سینکڑوں انسانی جانوں کا ضیاع ہوچکا ہے بہت سے معصوم بچے موٹر(بقیہ نمبر9صفحہ12پر)

سائیکل سوار اس پتنگ کی ڈور پھرنے سے جان کی بازی ہار چکے ہیں لیکن اس کھیل میں دلچسپی رکھنے والے اور اس کاروبار سے منسلک عناصر فقط ذاتی مفادات کے لیئے اس مکروہ کاروبار کو بدستور جاری رکھے ہوئے ہیں جبکہ دوسری طرف پولیس کی جانب سے چھاپے مارے جارہے ہیں اور گرفتاریاں بھی عمل میں لائی جاتی ہیں لیکن سزا و جزا کے فرسودہ نظام ان قانون شکن عناصر کے لیئے دکھ نہیں شہری حلقوں نے آر پی او، سی پی او اور ایس پی اپریشن ربنواز ٹلہ سے اپیل کی ہے کہ کورونا وائرس کے باعث لاک ڈاون کی آڑ میں پتنگ باز منچلوں کے ہاتھوں انسانی زندگیوں کو بچانے کے لیئے سخت اقدامات کرنے سمیت پتنگ بازی میں ملوث اور بیچنے والوں کو قرار واقعی سزا دی جائے تاکہ مزید انسانی جانوں کے ضیاع سے بچا جاسکے۔

چھکے

مزید : ملتان صفحہ آخر