کرونا کے 90فیصد سے زائد مریضوں کا ٹی سی ایم علاج موثر رہا: چینی عہدیدار

  کرونا کے 90فیصد سے زائد مریضوں کا ٹی سی ایم علاج موثر رہا: چینی عہدیدار

  



ووہان(شِنہوا)کلینکل مشاہدے میں ظاہر ہوا ہے کہ چینی مین لینڈ پر کرونا وائرس کے مجموعی تصدیق شدہ کیسز کے 90 فیصد مریضوں کے علاج میں روایتی چینی طب (ٹی سی ایم) موثر ثابت ہوا ہے، یہ بات روایتی چینی طب کے ایک عہدیدار نے پیر کو کہی۔سب سے متاثرہ صوبے ہوبے کے دارالحکومت ووہان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے روایتی چینی طب کی قومی انتظامیہ کے پارٹی سربراہ یو یان ہونگ نے کہا کہ چینی مین لینڈ پر کل 74 ہزار 187 مریضوں یا مجموعی تصدیق شدہ کیسز کے 91.5 فیصد کا روایتی چینی طب کے ذریعہ علاج ہوا۔ہوبے میں کرونا وائرس کے 90.6 فیصد مریضوں کا ٹی سی ایم سے علاج کیا گیا۔یو نے کہا کہ تمام ٹی سی ایم نسخوں نے موثر طریقے سے علامات کو دور، بیماری کی افزائش کو سست، علاج کی شرح کو بہتر بنایا اور اموات کو کم کیا اور مریضوں کی صحت یابی میں اضافہ کیا۔

مزید : علاقائی