خواتین کیلئے نیل پالش کا انتہائی خطرنا ک نقصان سائنسدانوں نے بتا دیا

خواتین کیلئے نیل پالش کا انتہائی خطرنا ک نقصان سائنسدانوں نے بتا دیا
خواتین کیلئے نیل پالش کا انتہائی خطرنا ک نقصان سائنسدانوں نے بتا دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) خواتین اپنے میک اپ کے بارے میں ہمیشہ متفکر رہتی ہیں، ایک گھنٹے کے لیے گھر سے باہر نکلنا ہو تو ڈیڑھ گھنٹہ اس کی تیاری میں لگا دیتی ہیں۔ہمیشہ کپڑوں کی مناسبت سے میک اپ کرتی ہیں اور ان کے میک اپ کا ایک اہم جزو ”نیل پالش“ ہوتا ہے۔ خواتین میچنگ نیل پالش کے بغیر میک اپ مکمل ہونے کا تصور بھی نہیں کر سکتیں لیکن نیل پالش کے حوالے سے خواتین کے لیے ایک بری خبر ہے۔

مزیدپڑھیں:مردوں کا بڑا دھوکہ سائنسدانوں نے بے نقاب کر دیا خواتین کو بھی مشورہ دے دیا

سٹین فورڈ یونیورسٹی کی سائنسدان پروفیسر ڈاکٹر تھو کواک نے خبردار کیا ہے کہ نیل پالش اور ناخنوں پر استعمال ہونے والے دیگر مصنوعات میں زہرےلے کیمیکل استعمال کیے جاتے ہیں جن سے خواتین مہلک بیماریوں میں مبتلا ہو سکتی ہیں، خاص طور پر ان میں کینسر اور بانجھ پن کا شکار ہونے کاخدشہ بڑھ سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ناخنوں پر استعمال ہونے والی میک اپ کی مصنوعات میں استعمال ہونے والے تین کیمیکل ٹالیوئن، فارمیلڈوہائڈ اورڈبیوٹائل فتھالیٹ خواتین کی صحت کے لیے کسی زہر سے کم نہیں۔ان کیمیکلز کے سیلون ورکرز کی صحت پر بھی نہایت برے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔بیوٹی سیلونز میں ہوا کے خروج کا کوئی خاطر خواہ بندوبست نہیں ہوتا اس لیے ان کیمیکلز کی بدبو سیلون کے اندر ہی رہتی ہے اور ورکرز اور میک اپ کے لیے آنے والی خواتین میں بیماریوں کا باعث بنتی ہے۔ ان کیمیکلز سے سردرد، سانس لینے میں دشواری ، نسیان اور جلدی امراض بھی لاحق ہو سکتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں نے اس حوالے سے سینکڑوں سیلون ورکرز اور مالکان سے گفتگو کی ہے،ان میں سے متعدد نے بتایا کہ ان کیمیکلز کی وجہ سے ان کی صحت خراب ہو گئی،جو بیماریاں انہوں نے بتائیں ان میں سردرد، کینسر اور حمل کی پیچیدگیاں شامل ہیں۔ اگرچہ تحقیق سے ان کیمیکلز اور بیماریوں کے تعلق کے بارے میں حتمی جواب نہیں ملتا لیکن ورکرز اور مالکان کے بتائی گئی باتیں بھی نظر انداز نہیں کی جا سکتیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -