طبی مراکز کی بحالی، پنجاب نے خیبر پختونخوا سے معاونت مانگ لی

طبی مراکز کی بحالی، پنجاب نے خیبر پختونخوا سے معاونت مانگ لی
طبی مراکز کی بحالی، پنجاب نے خیبر پختونخوا سے معاونت مانگ لی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

پشاور،لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) صوبہ پنجاب نے خیبر پختونخوا میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت قدرتی آفات سے متاثرہ ضلع لوئر دیر میں طبی مراکز کی بحالی کے منصوبے کے بہترین نتائج کو دیکھتے ہوئے طبی مراکز کی بحالی کے سلسلے میں مدد طلب کرلی ۔
ایکسپریس کے مطابق خیبر پختونخوا میں عالمی بینک کی مالی معاونت سے سیلاب و دیگر قدرتی آفات سے متاثرہ پانچ اضلاع کوہستان‘ تور‘ غر‘ بونیر‘ لوئر دیر اور بٹگرام میں ”ریوٹیلائزیشن آف ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سروسز“ نامی منصوبے پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت گزشتہ ایک سال سے متعارف کرارکھا ہے مجوزہ منصوبے کی مدت رواں سال 30جون کو ختم ہورہی ہے تاہم عالمی بینک نے منصوبے میں ایک سال مزید توسیع دینے کا عندیہ دیا ہے جس کیلئے منصوبہ بندی کی جارہی ہے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب کے محکمہ صحت نے لوئر دیر میں جاری منصوبے کے بہترین نتائج کو دیکھتے ہوئے صوبائی محکمہ صحت خیبر پختونخواہ سے تکنیکی معاونت طلب کی ہے تاکہ ضلع پنجاب میں حالیہ سیلاب سے متاثرہ اضلاع میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ منصوبوں کے ذریعے طبی مراکز و ہسپتالوں کی بحالی کی جاسکے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب میں سیلاب سے متاثرہ ہسپتالوں و طبی مراکز کی تعداد زیادہ ہے جس میں حکومت کو مزید وسائل درکار ہیں۔

مزید :

لاہور -