11 گھنٹے لوڈشیڈنگ ، مٹیاری میں عوام کا گرڈسٹیشن پر دھاوا

11 گھنٹے لوڈشیڈنگ ، مٹیاری میں عوام کا گرڈسٹیشن پر دھاوا
11 گھنٹے لوڈشیڈنگ ، مٹیاری میں عوام کا گرڈسٹیشن پر دھاوا

  

لاہور (ویب ڈیسک) آسمان سے برستی آگ میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن بنا کر رکھ دی ہے، شہروں میں 9 گھنٹے اور دیہات میں 11 گھنٹوں کی بجلی کی بندش نے لوگوں کی چیخیں نکلوادی ہیں بجلی کی بندش سے پانی کا بحران بھی بڑھ گیا ہے، لوگ تنگ آکر سڑکوں پر آگئے ہیں، مٹیاری میں گرڈسٹیشن پر دھاوا بول دیا، این این آئی نے وزارت بجلی کے حوالے سے بتایا کہ بجلی کا شارٹ فال 5 ہزار 5 سو میگا واٹ ہو گیا ہے ، طلب اور رسد کے فرق کی وجہ سے لوڈشیڈنگ میں اضافہ ہوا ہے۔ آئی این پی کے مطابق چارسدہ میں بدترین لوڈشیڈنگ کیخلاف مندنی میں اے این پی ، جماعت اسلامی، مزدور کسان پارٹی ، قومی وطن پارٹی اور تاجروں نے زبردست احتجاج مظاہرہ کیا، تحصیل ناظم یحیٰ جان بھی شریک ہوئے ، جس سے ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو گیا، مندنی اور مضافاتی علاقوں میں 20 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے، مٹیاری ضلع میں طویل لوڈشیڈنگ کے خلاف سینکڑوں شہری نیشنل ہائی وے پر احتجاج کیلئے نکل آئے ، مشتعل افراد کا حیسکو مٹیاری کے دفتر پر دھاوا بول کر کمپیوٹر ، فرنیچر دیگر اشیاءبھی توڑ پھوڑ ڈالیں، ایس ڈی او اور عملہ دفتر چھوڑ کر فرار ہو گیا، لیسکو حکام کے مطابق لوڈشیڈنگ ابھی بھی 6 گھنٹے ہی بتائی جارہی ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ لوڈشیڈنگ معمول سے ہٹ کر کی جارہی ہے اور وزارت پانی وبجلی کو بھی یہی رپورٹ دی گئی ہے کہ لوڈ شیڈنگ میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا۔

مزید :

لاہور -