تیل دار اجناس کی پیداوار میں اضافہ کرکے قیمتی زرمبادلہ کی بچت کی جا سکتی ہے،ماہر اقتصادیات

تیل دار اجناس کی پیداوار میں اضافہ کرکے قیمتی زرمبادلہ کی بچت کی جا سکتی ...

  

اسلام آباد (اے پی پی)ملک میں کھانے کے تیل کی سالانہ کھپت 3.7 ملین ٹن ہے اور پاکستان کھانے کے تیل کی مجموعی ضرورت کا صرف 16 فیصد حصہ مقامی طور پر حاصل کررہاہے جبکہ 70فیصد سے زائد کھانے کاتیل درآمد کیا جاتاہے ۔ماہر اقتصادیات ضیاء بندے نے اپنے ایک بیان میں کہاہے کہ کھانے کاتیل کی ملکی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے تیل کی درآمد کے ساتھ ساتھ تیل دار اجناس بھی درآمد کی جاتی ہیں جن سے تیل نکال کر مقامی ضرورتوں کو پورا کیاجاتاہے۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان میں پیدا ہونے والی تیل دار اجناس سے سالانہ 6لاکھ ٹن کھانے کا تیل نکالا جاتاہے جو مقامی ضرورت کا 16فیصد بنتاہے۔ انہوں نے کہاکہ تیل دار اجناس کی ملکی پیداوار میں اضافہ سے کھانے کے تیل کی درآمد کو کم کرکے قیمتی زرمبادلہ کی بچت کی جا سکتی ہے۔

مزید :

کامرس -