ایف بی آرتاجروں کو غیرضروری نوٹس بھجواکر ہراساں کرنے کا سلسلہ روکے

ایف بی آرتاجروں کو غیرضروری نوٹس بھجواکر ہراساں کرنے کا سلسلہ روکے

  

لاہور (کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر کے صدر شیخ محمد ارشد نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو پر زور دیا ہے کہ وہ تاجروں کو غیرضروری نوٹس بھجواکر ہراساں کرنے کا سلسلہ روکے کیونکہ اس سے کاروباری ماحول خراب اور تاجر بددل ہورہے ہیں۔ اگر یہ سلسلہ فوری طور پر نہ رکا تو کاروبار بند، بے روزگاری میں اضافہ اور حکومتی محاصل میں کمی ہوگی۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار لاہور چیمبر کی ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ لاہور چیمبر کے سینئر نائب صدر الماس حیدر اور نائب صدر ناصر سعید نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ شیخ محمد ارشد نے کہا کہ اس وقت جب تاجر برادری کو ریلیف کی ضرورت ہے، ایف بی آر کی جانب سے نوٹس بھجوانا مسائل میں مزید اضافہ کررہا ہے۔ انہو ں نے کہا کہ نجی شعبہ ملک کی معاشی ترقی میں کردار ادا کرنا چاہتا ہے جس کے لیے ضروری ہے کہ اسے کاروبار کے لیے موزوں ماحول مہیا کیا جائے، وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو صورتحال کا نوٹس لینا اور ایف بی آر کو کاروباری شعبے کے مفادات سے منافی اقدامات سے روکنا چاہیے۔ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر نے مزید کہا کہ حکومت کو سمگلنگ کی روک تھام، ٹیکسوں کے دوہرے نظام کے خاتمے ، وفاقی اور صوبائی ٹیکس نظام میں ہم آہنگی لانے اور ٹیکسوں کے پیچیدہ نظام کو آسان بنانے کے لیے بھی اقدامات اٹھانے چاہئیں۔

انہوں نے کہا سمگلنگ کا مسئلہ دن بدن گھمبیر ہوتا جارہا ہے اور اس کی وجہ سے مقامی صنعتوں و قومی خزانے کو سالانہ اربوں ڈالر کا نقصان ہورہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس غیرقانونی تجارت کو روکنے کے لیے حکومت اپنے تمام وسائل بروئے کار لائے اور جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے بارڈرز پر ہی سمگلنگ کو روکے۔ انہوں نے کہا کہ انٹیلی جنس کے اہلکار مارکیٹوں کے باہر ناکے لگاکر آنے جانے والے مال کو چیک اور تاجروں کو ہراساں کرتے ہیں ، یہ غیر منطقی طریقہ ہے جس سے سمگلنگ کی روک تھام میں کوئی مدد نہیں ملے گی۔ لاہور چیمبر کے صدر نے کہا کہ تاجر برادری کو وفاقی بجٹ 2016-17ء سے بھاری توقعات ہیں لہذا حکومت اس میں سمگلنگ، ٹیکسوں کے پریشان کردینے والے نظام، دوہرے ٹیکسوں کے خاتمے اور صنعتوں کے خام مال پر درآمدی ڈیوٹی کے خاتمے سمیت دیگر اقدامات اٹھائے۔

مزید :

کامرس -