ریسلر سشیل کمار نے بھارتی ریسلنگ فیڈریشن کودغاباز قرار دیدیا

ریسلر سشیل کمار نے بھارتی ریسلنگ فیڈریشن کودغاباز قرار دیدیا

  

نئی دہلی(آن لائن)2بار کے اولمپک میڈلسٹ سشیل کمار نے ریسلنگ فیڈریشن آف انڈیا (ڈبلیو ایف آئی)پر دغابازہونے کا الزام دھر دیا۔سشیل کے مطابق فیڈریشن کا کہنا تھا کہ ریو اولمپکس سے قبل ان کے اور نارسنگھ یادیو میں بہتر امیدوار چننے کیلئے74کے جی فری اسٹائل کیٹیگری میں ٹرائل کا انعقاد کیا جائیگا۔ انھوں نے کہا کہ میں یہ نہیں کہہ رہا کہ اولمپکس میں میرے سابقہ ریکارڈز کی وجہ سے بھیجا جائے، بس میں تو اتنا کہہ رہا ہوں کہ ٹرائلزمنعقدکیا جانا چاہیے تھا، میں چاہتا ہوں کہ وہ میری کارکردگی کا تجزیہ کرلیں، جب آپ یہ چیک نہیں کریں گے کہ اس وقت میں کیسی کارکردگی کا مظاہرہ کررہا ہوں تو آپ یہ کیسے جانیں گے کہ میرے اور نارسنگھ کے درمیان کون بہتر ہے، 2008بیجنگ اولمپکس میں برانز اور 2012لندن اولمپکس میں چاندی کا تمغہ جیتنے والے سشیل کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس فیصلے سے وہ فیڈریشن پر برہم نہیں ہیں۔انھوں نے کہا میں فیڈریشن سے ناراض نہیں ہوں لیکن میں اتنی محنت کرنے کے بعد کافی برا محسوس کررہاہوں کہ ایسا ہوا، مجھے صرف بھارت کے لوگوں سے ہی سپورٹ نہیں مل رہی بلکہ امریکا، کینیڈا اور آسٹریلیا میں رہنے والے بھارتیوں کا ساتھ بھی مجھے حاصل ہے، وہ مجھ سے پوچھ رہے ہیں کہ ڈبلیو ایف آئی کیوں اس طرح کی سیاست کھیل رہا ہے، ریسلر نے کہا کہ سخت محنت کا سلسلہ جاری رکھنا میری جاب اور میں یہی کررہا ہوں، جو کچھ میرے ہاتھ میں ہے وہ سب کررہا ہوں، واضح رہے کہ نارسنگھ نے پچھلے سال لاس ویگاس میں ورلڈ چیمپئن شپ 74کے جی مقابلوں میں برانز میڈل حاصل کرنے کے بعد اولمپکس کوٹے میں اپنی جگہ محفوظ بنائی تھی۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -