گورنمنٹ نوازشریف ہسپتال یکی گیٹ میں ڈاکٹرز کی 186 میں سے106 پوسٹیں خالی

گورنمنٹ نوازشریف ہسپتال یکی گیٹ میں ڈاکٹرز کی 186 میں سے106 پوسٹیں خالی

  

لا ہور (جنر ل رپو رٹر)گورنمنٹ نوازشریف ہسپتال یکی گیٹ کی حالت زارٹیچنگ کا درجہ ملنے پر بھی بہترنہ ہوسکی۔ فزیشن،نیوروسرجری،نفرالوجی، انستھیزیااورای این ٹی کے شعبوں میں کنسلٹنٹ کی تمام پوسٹیں خالی۔ کنسلٹنٹ ڈاکٹرزنہ ہونے سے پا نچ برسوں سے نئے ایمرجنسی بلاک کوبھی مکمل فعال نہ کیا جا سکا۔تفصیلا ت کے مطا بق گورنمنٹ نوازشریف ہسپتال یکی گیٹ میں سینئرڈاکٹرزکی شدیدکمی کا سامناکرنا پڑرہا ہے۔یکی گیٹ ہسپتال میں مجموعی طور پر ڈاکٹرز کی 186 میں سے106 پوسٹیں گزشتہ پانچ برسوں سے خالی پڑی ہیں۔ نواز شریف ہسپتال یکی گیٹ میں گریڈ 18 کے فزیشن ، نیوروسرجن ، نفرالوجسٹ ، انستھیٹسٹ اورای این ٹی سپیشلسٹ کی تمام پوسٹیں خالی پڑی ہیں۔اس کے علاوہ پیڈیاٹریشن کی ایک ،جنرل سرجن کی دو ، ریڈیالوجسٹ کی ایک،پتھالوجسٹ کی ایک پوسٹ خالی پڑی ہے۔گورنمنٹ نواز شریف ہسپتال یکی گیٹ میں ایڈیشنل پرنسپل میڈیکل افسرگریڈ19 کی 31 پوسٹوں میں سے29 خالی ہیں جبکہ ایڈیشنل پرنسپل وومن میڈیکل افسر کی دس پوسٹیں ہیں جوسب خالی پڑی ہیں۔سینئرمیڈیکل افسرکی 50 میں سے46 پوسٹیں خالی پڑی ہیں۔ سینئر وومن میڈیکل افسرکی 15 میں سے13 سیٹیں خالی پڑی ہیں۔ میڈیکل افسراوروومن میڈیکل افسرکی بھی چار چار پوسٹیں خالی پڑی ہیں۔سینئر ڈاکٹرزکی شدید قلت سیگورنمنٹ ٹیچنگ ہسپتال یکی گیٹ میں پانچ برس قبل تعمیر کئے گئے نئے ایمرجنسی بلاک کو بھی مکمل فعال نہیں کیا جا سکا اورڈاکٹرزکی عدم موجودگی کی وجہ سے شہری جدید طبی سہولتوں سے محروم ہیں۔

پوسٹیں خالی

مزید :

صفحہ آخر -