نامعلوم افراد نے لڑکیوں سے باتیں کرنے پر نوجوان کی زبان کاٹ دی ، ملزم فرار

نامعلوم افراد نے لڑکیوں سے باتیں کرنے پر نوجوان کی زبان کاٹ دی ، ملزم فرار
 نامعلوم افراد نے لڑکیوں سے باتیں کرنے پر نوجوان کی زبان کاٹ دی ، ملزم فرار

  

ڈی جی خان(مانیٹرنگ ڈیسک) ڈی جی خان میں نامعلوم افراد نے لڑکیوں سے موبائل فون پر باتیں کرنے والے نوجوان پر تشدد کے بعد زبان کاٹ دی جس کے بعد ملزم فرار ہو گئے۔بعض ذرائع کاکہناتھاکہ جس لڑکی سے باتیں کرتاتھا ، وہ مذکورہ نوجوان کی سابقہ اہلیہ تھیں جبکہ کچھ اخبارات کا کہناہے کہ لڑکی اس نوجوان کی دوست تھی تاہم غیرمصدقہ ذرائع سے تصدیق نہیں ہوسکی ۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق نواحی قصبے جامپور میں نامعلوم افراد نے نوجوان سعد سرفراز کو اغواءکیا اور اسے تشدد کے بعد گلے میں پھینک کر فرار ہو گئے ۔ نوجوان چیخ و پکار کرتا رہا اور جب مقامی افراد نے دیکھا تو اس کی زبان کٹی ہوئی تھی اور لہو لہان تھا ۔

پاکستانیوں کے لئے بچت کا شاندار موقع، ایسی ویب سائٹ آگئی کہ آپ کی خوشی کی انتہا نہ رہے گی

ذرائع کا کہنا ہے کہ نوجوان سعد سرفراز کو اتوار کی رات نامعلوم افراد نے اغواءکر کے تشدد کا نشانہ بنایا اور اس کی زبان کاٹ کر گلی میں پھینک کر فرار ہو گئے جس کے بعد اسے ٹراما سینٹر منتقل کردیا گیا جہاں اس کا علاج جاری ہے تاہم ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ نوجوان کی قوت گویائی بحال ہونے کے امکانات کم ہیں۔

پولیس نے موقع پر پہنچ کر سعد سرفراز کے اہل خانہ کے بیانا ت قلمبند کر لیے ہیں اور ملزمان تک رسائی کی کوشش کی جا رہی ہے ۔

راتوں رات جلد میں نکھار لانے والی کریمیں کتنی خطرناک ہیں، جانئے

مزید :

ڈیرہ غازی خان -