کئی دہائیوں بعد امریکہ نے ویتنام کو اسلحہ کی فروخت پر پابندیاں ہٹانے کا اعلان کر دیا

کئی دہائیوں بعد امریکہ نے ویتنام کو اسلحہ کی فروخت پر پابندیاں ہٹانے کا ...
کئی دہائیوں بعد امریکہ نے ویتنام کو اسلحہ کی فروخت پر پابندیاں ہٹانے کا اعلان کر دیا

  

ہنوئی (اے پی پی) امریکی صدر باراک اوباما نے جنگ کی نشانیاں ختم کرتے ہوئے ویتنام پر عائد اسلحہ کی فروخت پر پابندیاں ہٹانے کا اعلان کر دیا ہے۔ذرائع ابلاغ کے مطابق صدر باراک اوباما نے یہ اعلان ویتنام کے اپنے پہلے دورے کے موقع پر دارالحکومت ہنوئی میں کیا۔ اس بارے میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہتھیاروں کی خریداری کے لیے اب بھی شرائط پر پورا اترنا ہو گا۔ اوباما ماضی میں امریکا کے حریف ملک ویتنام کا یہ تین روزہ دورہ بر اعظم ایشیا میں طاقت کے توازن کو بہتر بنانے کے مقصد سے کر رہے ہیں۔ جنوبی بحیرہ چین کے حوالے سے جاری کشیدگی میں ویتنام کی دفاعی صلاحیتوں کو بڑھانا بھی اس دورے کے مقاصد میں سے ایک مقصد ہے۔ واضح رہے کہ 1995ء میں دونوں ممالک کے باہمی تعلقات کی بحالی کے بعد اوباما ویتنام کا دورہ کرنے والے تیسرے امریکی صدر ہیں۔اوباما نے کہا ہیروشیما کے دورے پر معافی نہیں مانگوں گا۔ جاپانی ٹی وی سے گفتگو کرتے کہا لیڈر ہر طرح کے فیصلے کرتے ہیں اور جنگ کے دوران انہیں تسلیم کرنا پڑتا ہے۔ یہ تاریخ دانوں کا کام ہے وہ سوالات کریں۔ مجھے اعتماد ہے ٹی ٹی پی ٹرانس پیسفک پارٹنر شپ تجارتی معاہدے کی مخالفت کے باوجود امریکہ میں توثیق کر دی جائیں گی۔

مزید :

بین الاقوامی -