پنجاب میں بوگس دستاویزات پر ایک لاکھ 73ہزار اسلحہ لائسنس بنے

پنجاب میں بوگس دستاویزات پر ایک لاکھ 73ہزار اسلحہ لائسنس بنے
 پنجاب میں بوگس دستاویزات پر ایک لاکھ 73ہزار اسلحہ لائسنس بنے

  

لاہور(ویب ڈیسک )پنجاب حکومت کے گزشتہ ادوار میں ایک لاکھ 73ہزار 111بوگس دستاویزات پر جعلی اسلحہ لائسنس بنا ئے گئے۔ دھندے میں ملوث 13سرکاری ملازمین کو گرفتار کر لیا گیا۔ ایک سال میں 7850جعلی اسلحہ لائسنس پکڑے گئے اور لاہور میں 2070، فیصل آباد، ملتان، راولپنڈی، گجرات اور گوجرانوالہ میں 2145جعلی اسلحہ لائسنس پکڑے گئے۔ پنجاب میں 36اضلاع کے ڈی سی اوز کی جانب سے 3لاکھ 24ہزار 641اسلحہ لائسنس کی تصدیق التواءکا شکار ہے۔ معتبر ذرائع کے مطابق 1947سے لیکر 2014تک پنجاب میں 24لاکھ 27ہزار 881اسلحہ لائسنس بنائے گئے مگر جعلساز بھی فائدہ اٹھا تے رہے اور پشت پناہی کرنے والوں سے مل کر غیر قانونی اقدامات میں مصروف رہے۔ سرکاری دستاویزات بتاتی ہیں کہ محکمہ داخلہ نے ایک سال 4ماہ میں 5لاکھ87ہزار اسلحہ لائسنس کی تصدیق کیلئے ڈی سی اوز کو دستاویزات بھجوائیں، ڈی سی اوز نے تصدیق کے بعد 2لاکھ 63ہزار لائسنس رجسٹرڈ کئے جبکہ 3لاکھ 24ہزار 641لائسنس کی تصدیق التوائکا شکارہے ، اس کی وجہ ریکارڈکا ضلعی دفاتر سے غائب ہونا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ضلعی انتظامیہ کوپرانے اسلحہ لائسنس کی تصدیق میں مشکلات ہیں۔ اسلحہ لائسنس کی کمپیوٹرائزیشن میں ڈی سی اوز کی جانب سے سست روی کا نوٹس لیتے ہوئے محکمہ داخلہ پنجاب نے فوری طورپر التواءکا شکار لائسنس کی تصدیق کرنے کے احکامات جاری کردئیے۔

مزید :

لاہور -