بھرپورازدواجی زندگی اور خوش رہنے کیلئے وہ 4 کام جو ہر مرد کو روزانہ کرنے چاہیے لیکن ہم میں سے زیادہ تر لوگ نہیں کرتے

بھرپورازدواجی زندگی اور خوش رہنے کیلئے وہ 4 کام جو ہر مرد کو روزانہ کرنے ...
بھرپورازدواجی زندگی اور خوش رہنے کیلئے وہ 4 کام جو ہر مرد کو روزانہ کرنے چاہیے لیکن ہم میں سے زیادہ تر لوگ نہیں کرتے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) مرد ہمیشہ سے ایسے طریقوں کی تلاش میں رہتے ہیں جن کے ذریعے ان کی ازدواجی صحت اچھی ہو اور وہ صنف مخالف کی توجہ کا مرکز رہیں۔ اب برطانیہ کی برسٹل یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے کچھ ایسے سائنسی طور پر تصدیق شدہ طریقے بتائے ہیں جو مردوں کی یہ خواہشات پوری کر سکتے ہیں۔

برطانوی اخبار ”دی انڈیپنڈنٹ“ کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے سب سے پہلے مردانہ طاقت بڑھانے کا طریقہ بتایا ہے۔ ماہرین نے مردوں کے ایک گروپ پر تحقیق کی جو مردانہ کمزوری کے مرض میں مبتلا تھے۔ انہیں ماہرین نے جنسی اعضاءکے ارد گرد واقع پٹھوں کی ورزش کرنے کو کہا جس سے 3سے 6ماہ کے دوران ان مردوں کی قوت مخصوصہ میں 40فیصد تک اضافہ ہو گیا۔ رپورٹ میں ماہرین نے مردوں کو اس مرض سے نجات پانے کے لیے پیڑو کے پٹھوں کی ورزش باقاعدگی سے کرنے کا مشورہ دیا۔

آج کل کے لڑکے لڑکیاں کم عمری میں ہی بلوغت تک کیوں پہنچ جاتے ہیں؟ ماہرین نے ایسی وجہ بتادی کہ سب کو سوچنے پر مجبور کردیا

خواتین کے لیے خود کو جاذب نظر بنانے کے لیے سائنسدانوں نے مردوں کو سرخ رنگ زیب تن کرنے کا مشورہ دیا۔ سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ جو مرد چاہتے ہیں کہ خواتین ان کی طرف متوجہ ہوں وہ سرخ لباس پہنا کریں کیونکہ سائنسی تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ خواتین سرخ رنگ پہننے والے مردوں کو زیادہ پسند کرتی ہیں۔

سائنسدانوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ ”جن مردوں کے چہرے پر بال ہوتے ہیں، یعنی انہوں نے مونچھیں اور داڑھی رکھی ہوتی ہے، ان میں قوت مخصوصہ زیادہ ہوتی ہے، مگر صنف مخالف کو متوجہ کرنے کے لیے چہرے کے بالوں کو نفاست کے ساتھ سنوارنا ازحد ضروری ہے۔ اپنی داڑھی اور مونچھوں کی باقاعدگی سے دیکھ بھال کریں تو صنف مخالف آپ کی طرف متوجہ ہو گی۔“

اس کے علاوہ سائنسدانوں نے مردوں کو ایک ایسا مشورہ بھی دیا ہے جس کے ذریعے وہ اپنی بیٹیوں کی پرورش بہتر انداز میں کر سکتے ہیں۔ سائنسدانوں نے ایک تحقیق میں ثابت کیا ہے کہ جو مرد گھر کے کام کاج میں اپنی بیوی کا ہاتھ بٹاتے ہیں ان کی بیٹیاں مستقبل میں ایسے غیررسمی یا کم غیررسمی پیشے اپنانے کی طرف راغب ہوتی ہیں جو زیادہ آمدنی کے حامل ہوتے ہیں۔

مزید :

تعلیم و صحت -