نیلم جہلم پراجیکٹ ٹھیکہ،ہائی کورٹ نے انکوائری روکنے سے انکار کردیا،سرکاری درخواست مسترد

نیلم جہلم پراجیکٹ ٹھیکہ،ہائی کورٹ نے انکوائری روکنے سے انکار کردیا،سرکاری ...
نیلم جہلم پراجیکٹ ٹھیکہ،ہائی کورٹ نے انکوائری روکنے سے انکار کردیا،سرکاری درخواست مسترد

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہورہائیکورٹ نے نیلم جہلم منصوبے کی پاور ٹرانسمیشن لائن کا ٹھیکہ من پسند کمپنی کو فراہم کرنے کے خلاف دائر درخواست پر جاری حکم امتناعی میں توسیع کر تے ہوئے ٹھیکہ حاصل کرنے والی کمپنی کے خلاف پیپرا کی انکوائری روکنے کے لئے وفاقی حکومت کی درخواست مسترد کر دی۔جسٹس عائشہ اے ملک نے کیس کی سماعت کی۔ درخواست گزار کے وکیل اظہر صدیق نے موقف اختیار کیا کہ حکومت نے من پسند ترک کمپنی کو نوازنے کے لئے نیلم جہلم پاور پراجیکٹ کی ٹرانسمیشن لائن بچھانے کا ٹھیکہ دے دیا۔انہوں نے کہا کہ ٹھیکہ دیتے ہوئے قواعد و ضوابط کو بھی مد نظر نہیں رکھا گیا جبکہ 46کروڑ روپے کا ٹھیکہ ایسی کمپنی کو فراہم کر دیا گیا جو ناقص میٹریل فراہم کر کے قومی خزانے کو نقصان پہنچا رہی ہے۔نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی کے وکیل نے جواب داخل کرنے کے لئے مزید مہلت کی استدعا کی۔سرکاری وکیل نے وفاقی حکومت کی جانب سے ٹھیکہ حاصل کرنے والی کمپنی کے خلاف پیپرا میں جاری انکوائری ختم کرنے کی استدعا کی۔عدالت نے ریمارکس دئیے کہ پیپرا رولز کی شق 18کے تحت پیپرا کو انکوائری کرنے کا مکمل اختیار حاصل ہے،عدالت نے وفاقی حکومت کی جانب سے انکوائری روکنے کی درخواست مسترد کرتے ہوئے پیپرا کو ایک ماہ میں انکوائری رپورٹ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی مزید سماعت آئندہ پیشی تک ملتوی کر دی ہے۔

مزید :

لاہور -