حرام جانوروں کی آلائشوں کی درآمد،ہائی کورٹ نے حکومت سے جواب طلب کرلیا

حرام جانوروں کی آلائشوں کی درآمد،ہائی کورٹ نے حکومت سے جواب طلب کرلیا
حرام جانوروں کی آلائشوں کی درآمد،ہائی کورٹ نے حکومت سے جواب طلب کرلیا

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے پاکستان میں حرام جانورں کی آلائشوں کی درآمدات پر پابندی عائد کرنے کے لئے دائر درخواست پر وفاقی حکومت اور چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے۔جسٹس شاہد وحید نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار شوکت علی کے وکیل ندیم صدیقی نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ پاکستان میںغیر قانونی طور پر گزشتہ ایک سال میں ڈیڑھ کروڑ ڈالر مالیت کے حرام جانوروں کی آلائشیں درآمد کی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ درآمد کی جانے والی حرام آلائشیں صابن،ٹوتھ پیسٹ اور گھی کے علاوہ متعدد اشیا کی تیاری میں استعمال کی جا رہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ آئین پاکستان کے آرٹیکل 227کے تحت پاکستان میں حرام جانوروں اور ان کی لائشوں کی خریدوفرخت نہیں کی جا سکتی،عدالت حرام جانوروں کی آلائشیں کی درآمد پر مستقل پابندی عائد کرنے کے احکامات صادر کرے۔سرکاری وکیل نے وفاقی حکومت کا جواب داخل کرنے کے لئے مزید مہلت کی استدعا کی جس پر عدالت نے وفاقی حکومت اور چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے دو ہفتوں میںجواب طلب کر لیاہے۔

مزید :

لاہور -