ایک آرمی چیف نے قائداعظم کا حکم ماننے سے بھی انکار کردیاتھا: کیپٹن صفدر

ایک آرمی چیف نے قائداعظم کا حکم ماننے سے بھی انکار کردیاتھا: کیپٹن صفدر
ایک آرمی چیف نے قائداعظم کا حکم ماننے سے بھی انکار کردیاتھا: کیپٹن صفدر

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ویب ڈیسک) مسلم لیگ ن کے رہنما اور رکن اسمبلی کیپٹن (ر) صفدر نے کہا ہے کہ ایک آرمی چیف نے قائداعظم کا حکم ماننے سے بھی انکار کردیاتھا، قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیپٹن (ر) صفدر نے کہا کہ پاکستان کے دوسرے آرمی چیف جنرل سر ڈگاس ڈیوڈ گریسی نے قائداعظم کا حکم ماننے سے انکار کردیاتھا، تب سے یہ روایت چلی آرہی ہے کہ سویلین حکومت کی بات نہیں مانتی، کیپٹن صفدر نے کہا کہ دانیال عزیز کو تھپڑ مارنے کی شدد مذمت کرتا ہوں۔

نعیم الحق نے دانیا عزیز ل کو نہیں ایک رکن پارلیمنٹ کو تھپڑ مارا ، یہی وہ کلچر ہے جو پی ٹی آئی نوجوانوں کو دے رہی ہے ، عمران خان کو اسکا نوٹس لینا چاہئے ، کیپٹن صفدر نے کہاکہ ابھی تو آپ نے پختونخوا میں حکومت بنائی ہے تو یہ حال ہے ، خدانخواستہ آپ کے ہاتھ ماچس لگ گئی تو پھر کیا حال ہوگا۔

واضح رہے کہ جنرل سر ڈگاس ڈیوڈ گریسی پاک فوج کے دوسرے کمانڈر ان چیف تھے، قیام پاکستان کے بعد بھارت نے کشمیر پر قبضہ کیا تو قائد اعظم محمد علی جناح نے آرمی چیف جنرل گریسی کو کشمیر میں پاکستانی فوج اتارنے کا حکم دیا جس کی تعمیل کرے سے جنرل گریسی نے انکار کردیاتھا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد